دہلی میں دم گھونٹ دینے والی آلودگی: تعمیراتی سرگرمیوں پر روک، ٹرک چلنا بھی محدود

Nov 08, 2017 09:30 PM IST | Updated on: Nov 08, 2017 09:45 PM IST

نئی دہلی۔  راجدھانی اور آس پاس کے علاقوں میں دم گھونٹ دینے والی آلودگی سے نپٹنے کے لئے لیفٹننٹ گورنر انل بیجل کے ساتھ وزیراعلی اروند کیجریوال اور دیگر سینئر حکام کی اعلی سطحی میٹنگ میں آج کئی اہم فیصلے کئے گئے۔ ان میں دہلی میں سبھی طرح کی تعمیراتی سرگرمیوں پر فوری طورپر روک لگانے کے ساتھ ساتھ لازمی اشیا کو لانے والے ٹرکوں کو چھوڑ کر دیگر ٹرکوں کے چلنے پر پابندی لگا دی گئی ہے۔

راج نواس میں آج ہوئی اس میٹنگ کے بعد مسٹر بیجل نے ٹوئٹ کرکے فیصلوں کی اطلاع دی ۔ اس سے پہلے حکومت نے تمام اسکولوں اور کلاسوں کو اتوار تک بند کرنے کا اعلان کیا تھا۔ آلودگی کم کرنے کے مقصد سے سڑکوں پر کم نجی گاڑیاں آئیں پارکنگ فیس بڑھانے کی ہدایت دی گئی ہے۔ دہلی میٹرو کو زیادہ پھیرے اور دہلی ٹرانسپورٹ کارپوریشن کو زیادہ سے زیادہ بسیں سڑکوں پر اتارنے کے لئے کہا گیا ہے۔

دہلی میں دم گھونٹ دینے والی آلودگی: تعمیراتی سرگرمیوں پر روک، ٹرک چلنا بھی محدود

طلبہ رومال سے اپنے چہرے ڈھکتے ہوئے: فائل فوٹو، پی ٹی آئی۔

دھوئیں کی وجہ سے قومی راجدھانی علاقہ میں لوگوں کو سانس لینا مشکل ہوگیا ہے۔ سڑکوں پر لوگ ماسک لگا کر نکل رہے ہیں۔ دہلی پولیس کے ٹریفک کنٹرول محکمہ کے اہلکار ماسک لگاکر اپنی ڈیوٹی کرتے نظر آرہے ہیں۔ عالمی صحت تنظیم کے پیمانوں کے مقابلہ دہلی میں آلودگی چالیس گنا زیادہ ہے۔ ڈاکٹر اور طبی اداروں نے آلودگی کی وجہ سے ’طبی ہنگامی صورتحال‘ کا اعلان کیا ہے ۔ محکمہ موسمیات کے مطابق ابھی کم از کم پانچ دن یہ دور جاری رہنے کا اندازہ ہے۔ ڈاکٹروں نے دھوئیں کی وجہ سے صبح کی سیرسے لوگوں کو بچنے کا مشورہ دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ استھما کے مریضوں کے لئے یہ صورتحال نہایت خطرناک ہے۔ اس کی وجہ سے دماغ، دل اور پھیپھڑوں کو بھی نقصان پہنچ سکتا ہے۔

پنجاب اور ہریانہ میں دھان کی پرالی جلائے جانے کی وجہ سے خاص طورپر دہلی میں آلودگی زہریلی سطح سے بھی اوپر نکل گئی ہے۔ کل سے ہی دہلی دھوئیں کی پرت کے نیچے ڈھکی ہوئی ہے جس سے بارش یا تیز ہوائیں چلنے پر ہی نجات مل سکتی ہے۔عالمی صحت تنظیم کے پیمانوں کے مطابق راجدھانی میں پی ایم۔25کی سطح چالیس گنا زیادہ ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز