جموں و کشمیر : مظاہرہ کے دوران پولیس فائرنگ میں دو نوجوانوں کی موت ، حالات مزید خراب ہونے کا خدشہ

Jun 16, 2017 10:38 PM IST | Updated on: Jun 16, 2017 11:08 PM IST

سرینگر : جنوبی کشمیر میں دہشت گردوں کے خلاف مہم میں رکاوٹ پیدا کرنے والے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے پولیس کی مبینہ فائرنگ میں دو نوجوانوں کی موت اورکئی دیگر زخمی ہو گئے۔  نوجوانوں کی موت کے بعد وادی میں ایک مرتبہ پھر احتجاج اور بند کا معاملہ زور پکڑ سکتا ہے اور حالات مزید کشیدہ ہوسکتے ہیں ۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جنوبی کشمیر میں دہشت گردوں سے تصادم کے دوران کچھ نوجوان نے اروانی کی سڑکوں اور آس پاس کے علاقوں میں مظاہرہ شروع کر دیا۔ مظاہرین نے سیکورٹی گھیرے کو توڑ کر تصادم کی جگہ کی طرف بڑھنے کی کوشش کی۔ سلامتی دستوں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کے گولے چھوڑے اور ہوا میں گولیاں چلائیں جس سے کئی افراد زخمی ہو گئے۔

جموں و کشمیر : مظاہرہ کے دوران پولیس فائرنگ میں دو نوجوانوں کی موت ، حالات مزید خراب ہونے کا خدشہ

ذرائع نے بتایا کہ زخمیوں کو فوری طور پر اننت ناگ ضلع اسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں ایک نوجوان کو ڈاکٹروں نے مردہ قرار دے دیا جس کی شناخت محمد اشرف اہنگر کے طور پر ہوئی ہے۔ اروانی میں پولیس اور مظاہرین کے درمیان ہوئے تصادم میں ایک دیگر نوجوان کی موت ہو گئی جس کی شناخت ایشان احمد ڈار کے طور پر ہوئی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز