سوپور میں سلامتی دستوں کے ساتھ جھڑپ میں حزب المجاہدین کے دو جنگجو ہلاک

Jun 01, 2017 11:58 AM IST | Updated on: Jun 01, 2017 04:31 PM IST

سری نگر۔  شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ کے ایپل ٹاون سوپور میں جمعرات کی صبح جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والی ایک جھڑپ میں حزب المجاہدین سے وابستہ دو مقامی جنگجوؤں کو ہلاک کر دیا گیا۔ مہلوک جنگجوؤں کی شناخت اعجاز احمد میر ساکنہ براٹھ کلان اور بشارت احمد شیخ ساکنہ بومئی سوپور کے بطور ظاہر کی گئی ہے۔ سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ ناتھ پورہ سوپور میں جنگجوؤں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر 22 راشٹریہ رائفلز (آر آر)، سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) اور جموں وکشمیر پولیس نے مذکورہ علاقہ میں جمعرات کی صبح تلاشی آپریشن شروع کیا۔ تاہم جب سیکورٹی فورسز مذکورہ گاؤں میں ایک مخصوص جگہ کی جانب پیش قدمی کررہے تھے تو وہاں موجود جنگجوؤں نے ان پر فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے مابین باضابطہ طور پر جھڑپ کا آغاز ہوا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جھڑپ کے دوران دو مقامی جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔ دونوں جنگجوؤں کی لاشیں ورثاء کے سپرد کردی گئی ہیں۔

ایک رپورٹ کے مطابق احتجاجی مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر قصبہ سوپور میں موبائیل فون خدمات معطل کردی گئی ہیں جبکہ تعلیمی اداروں میں تعطیل کا اعلان کیا گیا ہے۔

سوپور میں سلامتی دستوں کے ساتھ جھڑپ میں حزب المجاہدین کے دو جنگجو ہلاک

وادی میں انٹرنیٹ خدمات 27 مئی کو جنوبی ضلع پلوامہ کے سیموہ ترال میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں حزب المجاہدین کے معروف کمانڈر سبزار احمد بٹ کے سمیت دو جنگجوؤں کی ہلاکت کے بعد سے معطل ہے۔ یہ بات یہاں قابل ذکر ہے کہ پولیس تھانہ سوپور پر بدھ کے روز جنگجوؤں کی طرف سے کئے گئے گرینیڈ حملے میں ریاستی پولیس کے کم از کم چار اہلکار زخمی ہوگئے۔ حملہ انجام دینے والے جنگجو فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز