اتحاد کے رسمی اعلان سے قبل ایس پی کے امیدواروں کا اعلان بدقسمتی: کانگریس

Jan 20, 2017 09:01 PM IST | Updated on: Jan 20, 2017 09:01 PM IST

نئی دہلی: کانگریس نے اتر پردیش میں انتخابی اتحاد کی بات چیت کے درمیان سماجوادی پارٹی (ایس پی) کی طرف سے اپنے امیدواروں کا اعلان کرنے کو بدقسمتی قرار دیا ہے۔ کانگریس کے ترجمان اجے ماکن نے آج یہاں صحافیوں سے کہا کہ اتر پردیش میں سماج وادی پارٹی کے ساتھ انتخابی اتحاد کی بات چيت تقریبا مکمل ہو چکی تھی اور اسے صرف حتمی شکل دیا جانا باقی تھا لیکن اس سے پہلے ہی سماج وادی پارٹی نے آج اپنے 191 امیدواروں کی فہرست جاری کر دی۔ اس میں حیرت کی بات یہ ہے کہ ان نو سیٹوں پر بھی سماجوادی پارٹی نے امیدواروں کا اعلان کر دیا جن پر پچھلی بار کانگریس نے جیت درج کی تھی۔

انہوں نے کہا کہ کانگریس کے ریاستی انچارج غلام نبی آزاد اور سماج وادی پارٹی کے قومی صدر اکھلیش یادو کے ساتھ انتخابی اتحاد کی بات پوری ہو چکی تھی اور اس کا رسمی اعلان ہی باقی تھا۔ یہ انتہائی بدقسمتی کی بات ہے کہ بات چیت کا عمل مکمل ہونے کے باوجود مسٹر اکھیلیش یادو نے کانگریس کی پرواہ کئے بغیر اپنے امیدواروں کا اعلان کر دیا۔

اتحاد کے رسمی اعلان سے قبل ایس پی کے امیدواروں کا اعلان بدقسمتی: کانگریس

مسٹر اجے ماکن نے کہا کہ سماج وادی پارٹی کو ان نشستوں پر کم سے کم امیدوار طے نہیں کرنے چاہئے تھے جن پر موجودہ رکن اسمبلی کانگریس کے ہیں۔ ان سیٹوں پر منطقی طورپر کانگریس کا حق بنتا ہے اور ایس پی کو اس کا لحاظ تو کرنا ہی چاہئے تھا۔ یہ پوچھنے پر کہ سماج وادی پارٹی کے ساتھ کانگریس کے اتحاد کی امید ختم ہو گئی ہے؟ مسٹر ماکن نے کہا کہ سماج وادی پارٹی کے ساتھ اب بھی بات چیت چل رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز