یوپی اسمبلی الیکشن : ایودھیا اور امیٹھی سمیت 51 سیٹوں پر ووٹنگ کل ، ہند۔ نیپال سرحد سیل

Feb 26, 2017 07:19 PM IST | Updated on: Feb 26, 2017 07:19 PM IST

لکھنؤ : ایودھیا کی وجہ سے بھارتی جنتاپارٹی (بی جے پی) اور امیٹھی کی وجہ سے کانگریس کے لئے اہم اترپردیش اسمبلی انتخابات کے پانچویں مرحلے میں کل سخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان 11 اضلاع کی 51 سیٹوں پر پولنگ ہوگی۔ اس مرحلے میں سماجوادی پارٹی (ایس پی) -کانگریس اتحاد کا خاص طور پر امتحان ہو گا کیونکہ اس مرحلے میں جن سیٹوں پر ووٹنگ ہونی ہے ان میں قریب 80 فیصد پر انہی پارٹیوں کا قبضہ ہے۔

اس میں کانگریس کے گڑ امیٹھی سمیت سلطانپور، فیض آباد، امبیڈکر نگر اور بہرائچ میں بھی ووٹنگ ہونی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اس مرحلے میں بستی، بہرائچ اور گونڈہ سمیت تین عوامی جلسوں سے خطاب کیا۔ دیگر سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں نے بھی مہم میں کوئی کسر نہیں چھوڑی۔ امبیڈکر نگر ضلع کے اعلی پور(ریزرو) سیٹ سے بی ایس پی امیدوار کی موت ہو جانے سے الیکشن منسوخ کر دیا گیا ہے۔ اب وہاں آئندہ نو مارچ کو پولنگ ہوگی۔

یوپی اسمبلی الیکشن : ایودھیا اور امیٹھی سمیت 51 سیٹوں پر ووٹنگ کل ، ہند۔ نیپال سرحد سیل

ایس پی کانگریس اتحاد کے امیدوار امیٹھی اور گوری گنج اسمبلی سیٹوں پر آمنے سامنے ہونے سے دونوں پارٹیاں مشکوک ہیں۔ کانگریس نے 11 اضلاع میں سے سات اضلاع میں کوئی امیدوار انتخابی میدان میں نہیں اتارا ہے جس میں فیض آباد، امبیڈکر نگر، شراوستی، سدھارتھ نگر، سنت كبيرنگر، بستی اور بہرائچ شامل ہیں۔ کانگریس نائب صدر راہل گاندھی، بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) صدر مایاوتی، بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) صدر امت شاہ، ایس پی صدر اور ریاست کے وزیر اعلی اکھلیش یادو اور کئی مرکزی وزراء نے اپنی پارٹی کے امیدواروں کے حق میں بہت سے عوامی جلسوں سے خطاب کیا۔

اس مرحلے کے انتخابات میں سب کی نگاہیں امیٹھی اسمبلی سیٹ پر لگی ہیں جہاں پر سہ رخی مقابلہ ہے۔ اس سیٹ سے کانگریس لیڈر سنجے سنگھ کی پہلی بیوی گریما سنگھ بی جے پی سے اور دوسری بیوی امیتا سنگھ کانگریس کے ٹکٹ پر انتخابی میدان میں ہیں جبکہ ایس پی حکومت کے سرخیوں میں چھائے وزیر گایتری پرساد پرجاپتی نے اسے سہ رخی بنا دیا ہے۔

پانچویں مرحلے کے انتخابات میں سدھارتھ نگرضلع کے اٹواسیٹ سے اتر پردیش اسمبلی کے اسپیکر ماتا پرساد پانڈے، امبیڈکر نگر ضلع کے اکبر پور سے بی ایس پی ریاستی صدر راماچل راج بھر، اور كٹیهري سے بی ایس پی لیڈر لال جی ورما، سنت کبیرنگر ضلع کے خلیل آباد سیٹ سے پیس پارٹی کے صدر ڈاکٹر ایوب میدان میں ہیں۔ دو کانگریس ممبر اسمبلی مکیش شریواستو ایس پی کے ٹکٹ سے پياگ پور اور مادھوری ورما بی جے پی کے ٹکٹ سے نانپارا سیٹ سے انتخابی میدان میں ہیں۔

اس مرحلے میں 52 سیٹوں کے لئے 1.84 کروڑ ووٹر 19،167 پولنگ بوتھوں پر اپنی پسند کے امیدوار جتانے کیلئے ووٹ کےحق کااستعمال کریں گے۔ 2012 میں ہوئے اسمبلی انتخابات میں سماج وادی پارٹی نے 37 سیٹیں، بی ایس پی نے تین سیٹیں، بی جے پی نے پانچ سیٹیں اور کانگریس نے پانچ سیٹوں پر اور پیس پارٹی نے دو سیٹوں پر جیت درج کی تھی۔ پانچویں مرحلے میں 11اضلاع میں آئندہ 27فروری کو ووٹنگ ہونی ہے۔

دریں اثنا کل ہونے والی پولنگ کے پیش نظر یوپی میں دیوی پاٹن ڈویزن کے بہرائچ، شراوستی اور بلرام پور ضلع سے ملحق ہند۔ نیپال سرحد کو آج سیل کر دیا گیا۔ سشستر سیما بل (ایس ایس بی) 50 ویں کورپس کے ڈپٹی کمانڈینٹ جناردن مشرا نے بتایا کہ پانچویں مرحلے میں ہونے والی پولنگ میں سرحد پار سے قوم مخالف طاقتوں کے ذریعہ کسی طرح کی گڑبڑی کے اندیشہ کے پیش نظر سرحد کو سیل کر دیا گیا ہے۔ ڈویزن کے تین سرحدی اضلاع میں بہرائچ کی 98.5، شراوستی کی 51 اور بلرام پور کی 94.5 کلومیٹر سرحدیں کھلی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ نیپال کے دوست ملک ہونے کی وجہ سے صرف ہنگامی خدمات مکمل طورپر تفتیش کے بعد ہی دی جا رہی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ سرحدی علاقوں میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے، ڈاگ اسکوائڈ، انسداد بم دستہ، فائر فائربریگیڈ دستہ، دھات پکڑنے والے اور کسی بھی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کے لیے تمام طرح کے آلات چالو کر دیا گیا ہے۔ ایس ایس بی 50 اور 9 بی این کے تقریبا تمام 2200 مرد کو خواتین جوانوں کی چوکسی بڑھا دی گئی ہے۔ تمام نگرانی چوکیوں پر تعینات جوان سرحد پر آنے جانے والوں کے باریکی سے تلاشی لے رہے ہیں۔ مشتبہ خواتین کی تلاشی کے لیے خواتین شاخ کی خصوصی یونٹ کو لگایا گیا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز