امر پر ڈمپل کا نشانہ ، ایسے لوگوں کو نہ سنتی ہوں اور نہ ہی بچوں کو سننے دیتی ہوں ، ٹی وی بند کر دیتی ہوں

Mar 03, 2017 11:41 AM IST | Updated on: Mar 03, 2017 05:39 PM IST

لکھنو : نیوز 18 انڈیا سے خصوصی بات چیت میں اتر پردیش کے وزیر اعلی اکھلیش یادو کی بیوی اور ممبر پارلیمنٹ ڈمپل یادو نے امر سنگھ پر نشانہ سادھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسے لوگوں کی بات نہ تو سنتی ہوں اور نہ ہی بچوں کو سننے دیتی ہوں۔ جیسے ہی ٹی وی پر آتے ہیں تو ٹی وی بند کر دیتی ہوں۔

وہیں دوسری طرف سماج وادی پارٹی سے باہر نکالے جانے کے بعد امر سنگھ پارٹی کے خلاف آگ اگلتے نظر آ رہے ہیں۔ اس مرتبہ انہوں نے یوپی کے جونپور کے بجرنگ نگر علاقہ میں دہشت گردی اور قوم پرستی پر منعقدہ مباحثہ میں ایک ساتھ اکھلیش یادو، اعظم خان، گایتری پرجاپتی سمیت لالو یادو پر حملہ بولا۔ انہوں نے سماج وادی پارٹی کے لیڈروں کے نظریات کا موازنہ نظریاتی دہشت گردی سے کیا۔

امر پر ڈمپل کا نشانہ ، ایسے لوگوں کو نہ سنتی ہوں اور نہ ہی بچوں کو سننے دیتی ہوں ، ٹی وی بند کر دیتی ہوں

قبل ازیں 2 مارچ کو بھی امر سنگھ نے ہمارے ساتھی چینل ای ٹی وی سے خصوصی بات چیت میں دعوی کیا تھا کہ یوپی اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کی مکمل اکثریت کی حکومت بننے جا رہی ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے الزام لگایا تھا کہ سماج وادی پارٹی کے کئی لیڈروں کے غداروں اور دہشت گردوں سے تعلقات ہیں۔ اتنا ہی نہیں امر سنگھ نے کہا کہ اکھلیش یادو کو اب چاپلوسی ناپسند ہے اور وہ انتخابات میں جس زبان کا استعمال کر رہے ہیں، ان کو یوپی کے عوام ضرور سبق سكھائیں گے ۔

غور طلب ہے کہ یوپی میں اسمبلی انتخابات کو لے کر سیاسی گھمسان ​​عروج پر ہے۔ ڈمپل یادو بھی کافی فعال ہیں۔ انہوں نے ریاست کے کئی حصوں میں انتخابی ریلیوں سے خطاب کیا۔ سات مراحل میں ہو رہے انتخابات میں سے اب صرف دو ہی مراحل کے انتخابات ہی باقی ہیں ۔ چھٹے مرحلے کے انتخابات 4 مارچ کو ہوں گے۔

یوپی اسمبلی میں کل 403 نشستیں ہیں۔ 2012 کے اسمبلی انتخابات میں سماج وادی پارٹی نے 224 نشستیں جیت کر واضح اکثریت کے ساتھ حکومت بنائی تھی۔گزشتہ انتخابات میں بی ایس پی کو 80، بی جے پی کو 47، کانگریس کو 28، آر ایل ڈی کو 9 اور دیگر کو 24 نشستیں ملیں تھیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز