کانگریس۔ ایس پی اتحاد پر تعطل برقرار، سیٹوں کی تقسیم پر دونوں پارٹیاں اپنے اپنے موقف پر بضد

نئی دہلی۔ اتر پردیش اسمبلی انتخابات کو لے کر سماج وادی پارٹی اور کانگریس کے درمیان ہونے والے اتحاد کی بات ایک بار پھر ناکام ہو گئی ہے۔

Jan 21, 2017 09:15 PM IST | Updated on: Jan 21, 2017 09:15 PM IST

نئی دہلی۔ اتر پردیش اسمبلی انتخابات کو لے کر سماج وادی پارٹی اور کانگریس کے درمیان ہونے والے اتحاد کی بات ایک بار پھر ناکام ہو گئی ہے۔ سماج وادی پارٹی کے لیڈر نریش اگروال نے کہا ہے کہ کانگریس کے ساتھ ہونے والا اتحاد تقریبا ٹوٹ چکا ہے کیونکہ کانگریس 120 سیٹیں مانگ رہی ہے۔ کانگریس سیٹوں کو لے کر اپنی ضد چھوڑنے کو تیار نہیں۔ اگر کانگریس 100 پر نہیں مانتی تو اتحاد ٹوٹا ہوا سمجھئے۔

سماج وادی پارٹی لیڈر ذرائع کی مانیں تو کانگریس کے انتخابی پالیسی ساز پرشانت کشور اور وزیر اعلی اکھلیش یادو کے درمیان سیٹوں کی تقسیم کو لے کر ملاقات ہوئی۔ ملاقات میں کانگریس اور سماج وادی پارٹی کے درمیان سیٹوں پر بات نہیں بن پائی۔ میٹنگ میں کانگریس نے 120 نشستوں کا مطالبہ کیا۔ وہیں، سماج وادی پارٹی نے صاف کر دیا کہ کسی بھی قیمت پر وہ 100 سے زیادہ سیٹیں نہیں دے گی۔

کانگریس۔ ایس پی اتحاد پر تعطل برقرار، سیٹوں کی تقسیم پر دونوں پارٹیاں اپنے اپنے موقف پر بضد

واضح رہے کہ اس سے پہلے سماج وادی پارٹی کا آر ایل ڈی کے ساتھ بھی سیٹوں کو لے کر اتحاد نہیں ہو سکا تھا۔ ایس پی نے آر ایل ڈی کو 20 نشستیں دینے کی پیشکش کی تھی۔ لیکن آر ایل ڈی اس کے لئے راضی نہیں تھی۔ آر ایل ڈی نے 30 سیٹوں کا مطالبہ رکھا تھا جو ایس پی کو منظور نہیں تھا۔ جس کی وجہ سے اتحاد ہونے سے پہلے ہی ٹوٹ گیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز