یوپی کو یہ ساتھ پسند ہے ، نعرے سے عوام کو لبھائیں گے راہل-اکھلیش، کل پہلی بار شئیر کریں گے اسٹیج

Jan 28, 2017 01:52 PM IST | Updated on: Jan 28, 2017 01:52 PM IST

لکھنؤ۔  سلمان خان اور انوشکا شرما پر فلمائی گئی دنگل فلم کی گیت 'بیبی کو بیبس پسند' ہے کی طرز پر ایس پی اور کانگریس نے یوپی انتخابات کے لئے ایک نیا نعرہ 'یوپی کو یہ ساتھ پسند ہے' تیار کیا ہے۔ اتوار کو دارالحکومت لکھنؤ میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران راہل گاندھی اور اکھلیش یادو اس نئے نعرے کو لانچ کریں گے۔ اس کے ساتھ ہی کانگریس نائب صدر اور اکھلیش یادو مشترکہ طور پر ایک روڈ شو بھی نکالیں گے۔ اترپردیش کی سیاست میں یہ پہلا موقع ہوگا جب دو بڑی پارٹیوں کانگریس اور سماج وادی پارٹی کے دو بڑے لیڈران راہل گاندھی اور اکھیلیش یادو کل عوامی اسٹیج پر ایک ساتھ ہوں گے۔ کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی اور سماجوادی پارٹی کے صدر اکھیلیش یادو ایک پانچ ستارہ ہوٹل میں دوپہر قریب ایک بجے مشترکہ پریس کانفرنس کریں گے۔ دونوں ایک روڈ شو کا بھی انعقاد کریں گے۔ ریاستی اسمبلی انتخابات کانگریس اور سماجوادی پارٹی مل کر لڑ رہے ہیں۔اسمبلی کی کل 403سیٹوں میں سے 105پر کانگریس اور 298 پر ایس پی کے لڑنے کا معاہدہ ہوا ہے۔

کانگریس پارٹی کے اعلی عہدیداران کے ذرائع نے بتایا کہ دونوں رہنماؤں کا 14ریلیوں سے  مشترکہ طورپر خطاب کرنے کا منصوبہ ہے۔ سات مرحلوں میں اسمبلی انتخابات ہورہے ہیں۔ہر مرحلے میں دو دو عوامی جلسوں سےمشترکہ طورپر خطاب کرنے کا منصوبہ ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ کانگریس چاہتی ہے کہ اسے رائے بریلی اور امیٹھی کی سبھی 10سیٹوں پر امیدوار کھڑے کرنے دئے جائیں۔ اس کا کہنا ہے کہ اٹاوہ،مین پوری ،اعظم گڑھ اور قنوج جیسے سماجوادی پارٹی کے اثر والے اضلاع میں کانگریس نے سبھی سیٹیں ایس پی کےلئے چھوڑ دی ہیں تو ایس پی کو بھی رائے بریلی اور امیٹھی کی سیٹیں کانگریس کےلئے چھوڑنی چاہئیں۔ رائے بریلی سے سونیا گاندھی اور امیٹھی سے راہل گاندھی رکن پارلیمنٹ ہیں۔

یوپی کو یہ ساتھ پسند ہے ، نعرے سے عوام کو لبھائیں گے راہل-اکھلیش، کل پہلی بار شئیر کریں گے اسٹیج

اسی موضوع پر کل راہل گاندھی اور اکھیلیش یادو کے درمیان بات چیت ہوگی یا نہیں اس کی اطلاع تو نہیں مل سکی ہے لیکن دونوں مل کر مشترکہ پروگرام کا اعلان کرسکتے ہیں۔ایس پی کے ریاستی صدر نریش اتم نے بتایا کہ پارٹی کے صدر اکھیلیش یادو اور راہل گاندھی کے درمیان بات چیت بھی ہوسکتی ہے،لیکن بات چیت سیٹوں کے بجائے پروگرام اور آئندہ کے منصوبوں پر مبنی ہوگی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز