مشتبہ دہشت گردوں کو کارتوس سپلائی کرنے کے الزام میں کانپور سے راگھویندر سنگھ چوہان گرفتار

Mar 29, 2017 06:56 PM IST | Updated on: Mar 29, 2017 06:56 PM IST

کانپور : مدھیہ پردیش میں ٹرین دھماکہ اور اترپردیش میں مشتبہ دہشت گردوں کی گرفتاری کے معاملہ میں یوپی اے ٹی ایس کو ایک بڑی کامیابی ہاتھ لگی ہے۔ اے ٹی ایس نے کانپور پولیس کے تعاون سے ایک بڑے کارتوس سپلائر کو کانپور سے گرفتار کیا ہے۔ کارتورس سپلائر کا نام راگھویندر سنگھ چوہان بتایا جاتا ہے اور یہ شخص کانپور کے كاكادیو میں اسلحہ کی دکان چلاتا ہے۔

گزشتہ سات مارچ کو مدھیہ پردیش میں ٹرین دھماکہ سے وابستہ گروہ اور لکھنؤ میں انكاونٹر میں مارے گئے مشتبہ دہشت گرد کے پاس سے اے ٹی ایس نے تقریبا 700 کارتوس اور کھوکھے برآمد کرنے کا دعوی کیا تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ یوپی اے ٹی ایس نے سپلائر راگھویندر سنگھ چوہان کو کانپور سے اسی سلسلہ میں گرفتار کیا ہے۔ راگھویندر کی كاكادیو کے گيتانگر میں اسلحہ کی دکان ہے، جس کا نام ایل آر ایس آرمس اینڈ امیونیشن ہے۔

مشتبہ دہشت گردوں کو کارتوس سپلائی کرنے کے الزام میں کانپور سے راگھویندر سنگھ چوہان گرفتار

پہلے گرفتار کئے گئے افراد سے پوچھ گچھ میں راگھویندر کا نام شک کے دائرے میں آیا تھا، جس کے بعد جب اس کی اسلحہ کی دکان کی تلاشی لی گئی تو پتہ چلا ہے کہ اس اس نے کئی گڑبڑیاں کررکھی ہیں۔ چوہان نے کھنہ گن ہاؤس اور سیوا گن ہاؤس سے کارتوس خریدے ، لیکن اپنے رجسٹر میں اس کا اندراج نہیں کیا اور غیر قانونی طور پر اس کی کہیں اور سپلائی کی جارہی تھی ۔

اس کے پاس سے کئی جعلی مہریں بھی برآمد ہوئی ہیں، جن کی جانچ کی جا رہی ہے کہ ان کا استعمال کہاں کیا جا رہا تھا۔ یہ مہریں ضلع مجسٹریٹ، اپر ضلع مجسٹریٹ کانپور، میڈیکل افسربلهور، مختلف گن ہاؤس اور تعلیمی اداروں کی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز