یوگی کی بلا تفریق سب کی ترقی کرنے کی یقین دہانی ، وزرا کو 15 دنوں میں جائیداد کی تفصیلات دینے کی ہدایت

Mar 19, 2017 08:35 PM IST | Updated on: Mar 20, 2017 10:32 AM IST

لکھنو : اتر پردیش کے نو منتخب وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے حلف برداری کے بعد پہلی مرتبہ میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہماری حکومت انتخابات کے دوران کئے گئے تمام وعدے پورا کرے گی۔ ہم منشور میں کئے گئے تمام وعدوں کو پورا کرنے کے لئے مصروف عمل ہیں۔ آدتیہ ناتھ نے کہا کہ ہم ریاست کے عوام کو پوری طرح سے اس بات کی یقین دہانی کرانا چاہتے ہیں کہ ہماری حکومت بلا تفریق ترقیاتی کام کرے گی۔ یوپی کو ترقی اور خوشحالی کے راستے پر تیزی سے آگے بڑھانے کے لئے جو بھی مؤثر اقدامات کی ضرورت ہو گی، اس میں کہیں کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے۔

وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ ہماری حکومت کا بنیادی ضروریات کو پورا کرنے پر زور رہے گا۔ یوپی میں قانون و انتظام کی صورتحال بدحال ہے ، جسے درست کیا جائے گا۔ ہماری حکومت بے روزگاروں کو روزگار دے گی۔ اس کے لئے ہم سرکاری نوکری میں بھرتی کریں گے۔

یوگی کی بلا تفریق سب کی ترقی کرنے کی یقین دہانی ، وزرا کو 15 دنوں میں جائیداد کی تفصیلات دینے کی ہدایت

ادھر وزیر اعلی کا عہدہ سنبھالنے کے بعد یوگی آدتیہ ناتھ ایکشن میں بھی آ گئے ہیں۔ یوگی نے تمام وزراء کو 15 دنوں کے اندر جائیداد کی تفصیل فراہم کرنے کی ہدایت دی ہے۔ علاوہ ازیں یوگی آدتیہ ناتھ نے کابینہ وزرا کو اناپ شناپ بیان سے بچنے کی نصیحت بھی کی ہے۔ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی صدارت میں کابینہ کی آج یہاں ہوئی میٹنگ میں اس بات کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں طے کیا گیا کہ وزیر اعلی کے سکریٹری کو بھی اپنی جائیداد کو منظرعام کرنا ہوگا۔

یوگی حکومت کے دو کابینہ وزراء سدھارتھ ناتھ سنگھ اور شري كانت شرما نے صحافیوں کو بتایا کہ بدعنوانی کو پوری طرح ختم کرنے کا عہد کیا گیا ہے۔ یوگی حکومت بدعنوانی کو ختم کرنے اور قانون و انتظام کو چست درست رکھنے کے لئے کوئی کسر نہیں چھوڑے گی۔ کابینہ کے پہلے ہی اجلاس میں ذبیحہ خانوں اور کسانوں کا قرض معاف کرنے کے اعلان کو عملی جامہ پہنائے جانے کے سلسلے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ تعارفی ملاقات تھی۔کابینہ کی دوسری میٹنگ میں حکام سے بات چیت کرکے پوری منصوبہ بندی کے تحت کئے گئے وعدے پورے کئے جائیں گے۔

انہوں نے بتایا کہ تمام وزراء بی جے پی اور گٹھ بندھن کے 325 اراکین اسمبلیوں کے حلقوں میں جائیں گے اور مرکز اور ریاستی حکومت کی اسکیموں کو نافذ كروائیں گے۔ کابینہ وزیر سریش کھنہ کی قیادت میں نئے ممبران اسمبلی کو تربیت دینے کے لئے ایک کمیٹی بھی قائم کی جائے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز