اقلیتی برادری کو شک کی نظر سے دیکھا جانا بھارتیہ جنتا پارٹی کی کارستانی: مایاوتی

Feb 06, 2017 09:10 PM IST | Updated on: Feb 06, 2017 09:10 PM IST

فرخ آباد۔ بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) صدر مایاوتی نے آج الزام لگایا کہ دہشت گردی کے نام پر ملک میں اقلیتی برادری کو شک کی نظر سے دیکھا جانا واقعی مرکز کی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) حکومت کی کرتوت ہے۔ محترمہ مایاوتی نے  یہاں بھوجپور اسمبلی حلقہ کے قصبہ كما ل گنج واقع رام لیلا میدان میں بی ایس پی امیدواروں کی حمایت میں منعقد جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مرکز کی بی جے پی حکومت اقلیتوں کے مسائل کو نظر انداز کر رہی ہے اور ان کے تئیں متعصب رویہ اختیار کر رہی ہے۔ مذہبی بنیاد پرستی اور دہشت گردی کے نام پر مسلم کمیونٹی کو شک کی نظر سے دیکھا جانا بی جے پی کی ہی دین ہے۔ مسلم پرسنل لا میں بی جے پی کی دخل اندازی کی ان کی پارٹی پرزور مخالفت کرے گی۔

نوٹ بندي سے پہلے اپنے چہیتو ں اور سرمایہ داروں کی دولت ٹھکانے لگائے جانےکا الزام بی جے پی پر لگاتے ہوئے بی ایس پی لیڈر نے کہا کہ مرکز کو بتانا چاہیے کہ 500 اور 1000 روپے کے نوٹ کو بند کرنے کے بعد کتنا کالا دھن واپس آیا اور کتنوں کو سزا دی گئی۔ مرکزی حکومت نے غلط اقتصادی پالیسیوں سے توجہ ہٹانے کے لیے نوٹ بندي جیسا عجیب فیصلہ لیا۔

اقلیتی برادری کو شک کی نظر سے دیکھا جانا بھارتیہ جنتا پارٹی کی کارستانی: مایاوتی

فائل فوٹو

محترمہ مایاوتی نے کہا کہ بغیر تیاری کے پرانے نوٹ بند کیے جانے سے ملک کے 90 فیصد غریب، مزدور، کسان، بے روزگار آج بھی پریشانی میں ہیں۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنے چہیتے سرمایہ داروں اور بڑے کاروباریوں میں للت مودی، وجے مالیا، اڈانی کو مالا مال کر دیا۔ اسی کے بل پر اتر پردیش میں بی جے پی اقتدار میں آنے کا خواب دیکھ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے لوگ خود تو شیشے کے گھر میں رہتے ہیں اور دوسروں کے گھر میں پتھر پھینکتے ہیں۔ مسٹر مودی نے 2014 کے لوک سبھا انتخابات میں وعدہ کیا تھا کہ بیرون ملک میں جمع کالا دھن لائیں گے اور 100 دن کے اندر 15-20 لاکھ روپے غریب، کسان، مزدور وغیرہ لوگوں کے اکاؤنٹس میں جمع کریں گے۔ اس کے علاوہ کسانوں کے قرض کو معاف کریں گے ۔ وہ سب کے سب ہوا ہوائی اور کورے جملے ثابت ہوئے۔

بی ایس پی کی سربراہ نے کہا کہ دلتوں، پسماندہ طبقات اور اقلیتوں کو ہراساں کیا جا رہا ہے۔ بی جے پی اندر ہی اندرریزرویشن کے نظام کو بے اثر کرنے میں لگی ہے۔ ایسے میں بی جے پی کو ووٹ دینے کا مطلب ریزرویشن کو ختم کرنا۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ریاست میں بی ایس پی کی حکومت بننے پراعلی ذات کے غریب لوگوں کے لیے اقتصادی بنیاد پر ریزرویشن کی سہولت ملے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز