اتر پردیش میں شیعہ اور سنی بورڈوں کو جلد ہی کردیا جائے گا تحلیل ، وزیر اعلی یوگی نے دی منظوری

Jun 15, 2017 11:15 PM IST | Updated on: Jun 15, 2017 11:15 PM IST

لکھنؤ: بدعنوانی کے الزامات سے گھرے اترپردیش کے شیعہ اور سنی وقف بورڈوں کو جلد ہی تحلیل کر دیا جائے گا۔ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ سے منظوری ملنے کے بعد اس کی کارروائی شروع کر دی گئی ہے۔ یوپی میں وقف امور کے وزیر محسن رضا کا کہنا ہے کہ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے دونوں وقف بورڈوں کو تحلیل کرنے کی منظوری دے دی ہےاور بہت جلد دونوں بورڈوں کو تحلیل کر دیا جائے گا۔ محسن رضا نے بتایا کہ تمام قانونی پہلوؤں پر غور کرنے کے بعد دونوں بورڈوں کو تحلیل کرنے کی کارروائی شروع کی جا چکی ہے۔

خیال رہے کہ پردیش کے شیعہ وقف بورڈ اور سنی وقف بورڈ میں وقف املاک کی بندر بانٹ کے سنگین الزامات لگتے رہے ہیں۔ وقف کونسل آف انڈیا کی طرف سے حال ہی میں ان الزامات کی جانچ میں بھی مختلف بے ضابطگیاں پائی گئی تھیں۔

اتر پردیش میں شیعہ اور سنی بورڈوں کو جلد ہی کردیا جائے گا تحلیل ، وزیر اعلی یوگی نے دی منظوری

شیعہ وقف بورڈ پر لگے الزامات کی جانچ میں بورڈ کے موجودہ صدر وسیم رضوی کے کردار کو مشتبہ پایا گیا تھا۔ وقف بورڈ میں ہوئے گھپلوں کی آنچ پیشرو حکومت میں وقف کے وزیر رہے اعظم خاں پر بھی پڑ سکتی ہے۔ محسن رضا نے شیعہ اور سنی بورڈوں کو لے کر وقف کونسل آف انڈیا کی الگ الگ تیار کردہ رپورٹ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کو سونپ دی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز