بہتر ہو گا اگر اجودھیا میں بابری مسجد اور مندر تنازع آپسی بات چیت سے حل کیا جائے: یوپی گورنر رام نائک

Nov 03, 2017 09:28 PM IST | Updated on: Nov 03, 2017 09:29 PM IST

فیض آباد: اترپردیش کے گورنر رام نائک نے آج کہا ہے کہ اجودھیا میں واقع بابری مسجد۔مندر مقدمہ سپریم کورٹ میں زیر غور ہے لیکن بہتر ہوگا کہ یہ معاملہ باہمی بات چیت سے حل کیا جائے۔

ڈاکٹر رام منوہر لوہیا اودھ یونیورسٹی کے 22 ویں کنو کیشن تقریب میں شرکت کے بعد مسٹر نائک نے صحافیوں سے کہا کہ اجو دھیا میں واقع مسجد۔ مندر کا معاملہ سپریم کورٹ میں زیر غور ہے۔ دونوں کمیونٹی باہمی بات چیت سے اس معاملے کو سلجھانا چاہتی ہیں تو اس سے بہتر کوئی طریقہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ نے بھی دونوں فرقوں کے لوگوں کو یہی مشورہ دیا ہے۔

بہتر ہو گا اگر اجودھیا میں بابری مسجد اور مندر تنازع آپسی بات چیت سے حل کیا جائے: یوپی گورنر رام نائک

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز