مرادآباد میں دلت لڑکی کی عصمت دری ، مندر کا 52 سالہ پجاری گرفتار

اترپردیش میں مرادآباد کے كندرکی علاقے میں ایک پجاری نے دلت لڑکی کی عصمت دری کئے جانے کا معاملہ روشنی میں آیا ہے۔

Jul 12, 2018 12:18 PM IST | Updated on: Jul 12, 2018 12:21 PM IST

یوپی میں مرادآباد کے كندرکی علاقے میں ایک پجاری نے دلت لڑکی کی عصمت دری کئے جانے کا معاملہ روشنی میں آیا ہے۔پولیس ذرائع نے یہاں یہ اطلاع دی۔انہوں نے بتایا کہ كندركي علاقے کے اندھن پورن ننگلہ گاؤں میں شیو مندر کا 52 سالہ پجاری روندرپوري بیمار لوگوں کا جڑی بوٹی سے علاج کرتا تھا۔لڑکی کے لواحقین سات جولائی کو 20 سالہ بیمار لڑکی کو دوا دلانے مندر آئے تھے۔

پجاری نے کہا کہ ابھی ادویات تیار نہیں ہے۔ آپ لوگ لڑکی کو یہیں چھوڑ اپنا کام کریں ، دوا کچھ وقت بعد تیار کر دی جائے گی۔ اس کے بعد لڑکی کو لے جانا۔ لواحقین نوجوان لڑکی کومندر کے دھرمشالہ میں چھوڑ کر کام کے لئے چلے گئے۔کچھ دیر بعد لڑکی کے لواحقین مندر پہنچے تو لڑکی اور پجاری وہاں نہیں ملے اور دھرمشالہ کا تالا لگا ہوا ملا۔ لڑکی کے اہل خانہ کا الزام ہے کہ پجاری لڑکی کو بہلا پھسلا کر اپنے ساتھ لے گیا اور اس کی عصمت دری کی۔لڑکی کا کہنا ہے کہ کسی طرح پجاری کے چنگل سے وہ بدھ کو چھوٹ کر اہل خانہ کے ساتھ تھانے پہنچی اور پجاری کے خلاف رپورٹ درج کرائی۔

مرادآباد میں  دلت لڑکی کی عصمت دری ، مندر کا  52 سالہ پجاری گرفتار

علامتی تصویر

انہوں نے بتایا کہ معاملہ درج کرنے کے بعد چند گھنٹوں کے اندر ملزم ہوس کے پجاری روندر پوری کو گرفتار کر لیا گیا۔ لڑکی کو میڈیکل جانچ کے لئے اسپتال بھیج دیا گیا ہے۔ پادری نے اپنا گناه قبول کر لیا ہے جس کے بعد اسے جیل بھیج دیا گیا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز