اُپہار آتشزدگی سانحہ : گوپال انسل کو سپریم کورٹ سے جھٹکا ، 20 مارچ تک کرنی ہوگی خودسپردگی

Mar 09, 2017 02:00 PM IST | Updated on: Mar 09, 2017 02:00 PM IST

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے سنیما گھر آتشزدگی کے مجرم گوپال انسل کی جیل کی سزا میں تبدیلی سے متعلق عرضی مسترد کردی۔ تاہم انہیں خودسپردگی کرنے کے لئے 20 مارچ تک کی مہلت دی گئی ہے۔انہیں آج ہی خودسپردگی کرنی تھی۔ عدالت عظمی نے گوپال انسل کی جانب سے پیش ہونے والے سینئر وکیل رام جیٹھ ملانی کی دلیلیں سننے کے بعد گوپال انسل کو خودسپردگی کرنے کے لئے 20 مارچ تک کی مہلت دے دی۔ مسٹر جیٹھ ملانی نے دلیل دی کہ ان کے موکل 9اور 10 مارچ کو دہلی سے باہر رہیں گے، اس لئے انہیں (گوپال انسل کو) خودسپردگی کے لئے کم از کم 20 مارچ تک کی مہلت دی جائے، جسے عدالت نے مان لیا۔

عدالت عظمی نے اُپہار آتشزدگی کے متاثرین کی یونین کی جانب سے دائر وہ عرضی بھی مسترد کر دی، جس میں اس نے گوپال کے بڑے بھائی سشیل انسل کی سزا ختم کرنے کے فیصلے پر نظر ثانی کرنے کی اپیل کی تھی۔ گوپال انسل نے اپنے بھائی سشیل انسل کی مانند سزا میں تبدیلی کی مانگ کی تھی۔ عدالت عظمی نے حال ہی میں گوپال انسل کو اس معاملے میں جیل کی باقی مدت کی سزا کاٹنے کی ہدایت دی تھی جبکہ اس کے بڑے بھائی سشیل انسل کو جیل کی سزا سے راحت مل گئی تھی۔

اُپہار آتشزدگی سانحہ : گوپال انسل کو سپریم کورٹ سے جھٹکا ، 20 مارچ تک کرنی ہوگی خودسپردگی

واضح رہے کہ عدالت نے سشیل انسل کی عمر سے متعلق دشواریوں کو ذہن میں رکھتے ہوئے کہا تھا کہ اس نے پہلے ہی جیل کی سزا کاٹ لی ہے۔چھوٹے بھائی نے بھی اسی طرح کی راحت کی درخواست کرتے ہوئے دعوی کیا تھا کہ اس کی عمر 69 سال ہے اور اگر اسے جیل بھیجا گیا تو اس کی صحت کو ناقابل تلافی نقصان ہو گا۔

اُپہار سانحہ کے شکار کی یونین کی جانب سے سینئر وکیل کے ٹی ایس تلسی نے گوپال انسل کی درخواست کی پرزور مخالفت کی تھی۔ ان کی دلیل دی تھی کہ مرکزی تفتیشی بیورو اور یونین کی نظر ثانی کی درخواست کا فیصلہ آ چکا ہے اور اس فیصلے کی ایک بار اور نظرثانی نہیں کی جا سکتی۔ واضح رہے کہ انسل بردران کی ملکیت سنیما گھر میں ’بارڈر‘فلم کی نمائش کے دوران آگ لگ گئی تھی جس میں 59 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز