کرناٹک میں آئی ٹی چھاپہ ماری کو لے کر پارلیمنٹ میں ہنگامہ، کانگریس نے بتایا سازش

Aug 02, 2017 12:06 PM IST | Updated on: Aug 02, 2017 12:06 PM IST

نئی دہلی۔ کرناٹک میں محکمہ انکم ٹیکس کی چھاپہ ماری کو لے کر راجیہ سبھا میں ہنگامہ مچا ہوا ہے۔ کانگریس نے چھاپہ ماری کو بی جے پی کی سازش بتایا ہے۔ کانگریس نے راجیہ سبھا میں ویل میں جا کر نعرے بازی کی۔ راجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے رہنما غلام نبی آزاد نے بی جے پی پر پیسے بانٹنے کا الزام لگایا۔ آزاد نے کہا کہ ڈر ایک ریاست سے دوسری ریاست میں پہنچ گیا ہے۔ بی جے پی نے ممبران اسمبلی کو ڈرانے کی کوشش کی ہے۔

وہیں، وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کہا کہ ریزورٹ پر چھاپہ ماری نہیں کی گئی ہے۔ صرف توانائی کے وزیر کے گھر پر انکم ٹیکس کا چھاپہ پڑا ہے۔ راجیہ سبھا میں ہنگامہ کو دیکھتے ہوئے ایوان کی کارروائی 10 منٹ کے لئے روک دی گئی ہے۔

کرناٹک میں آئی ٹی چھاپہ ماری کو لے کر پارلیمنٹ میں ہنگامہ، کانگریس نے بتایا سازش

پارلیمنٹ: فائل فوٹو

وہیں، کانگریس کے ترجمان رنديپ سرجےوالا نے اس چھاپے ماری کو لوگوں کے دن دہاڑے قتل سے تعبیر کیا ہے۔ رنديپ سرجےوالا نے کہا کہ بی جے پی نے راجیہ سبھا الیکشن جیتنے کی سازش کے لئے ہر گندی اور بھدی چال کا استعمال کیا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ گجرات میں ممبران اسمبلی کو رشوت دینے کی کوشش کی گئی تھی لیکن جب سب کچھ ناکام ہو گیا تو مایوس بی جے پی حکومت کانگریس پر آئی ٹی چھاپے کا سہارا لے رہی ہے۔

کانگریس کے سینئر لیڈر اور راجیہ سبھا امیدوار احمد پٹیل نے کہا کہ بی جے پی راجیہ سبھا کی ایک نشست جیتنے کے لئے پیچھے پڑ گئی اور ہر صحیح اور غلط طریقہ اپنا رہی ہے۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز