یوپی ضمنی انتخابات : کم ہوئی پولنگ ، گورکھپور میں 43 فیصد تو پھولپور میں صرف 37.39 فیصد ووٹنگ

سخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان اتر پردیش کی گورکھپور اور پھول پور پارلیمانی سیٹ کے لئے آج صبح سات بجے پولنگ شروع ہو گئی۔تاہم ریاست میں ووٹنگ کی رفتار کافی سست نظر آرہی ہے ۔

Mar 11, 2018 12:38 PM IST | Updated on: Mar 11, 2018 09:16 PM IST

گورکھپور: سخت حفاظتی انتظامات کے درمیان اترپردیش کے گورکھپور اور پھولپور پارلیمانی سیٹ کے لئے آج ہوئے ضمنی الیکشن میں 40.20فیصد پولنگ ہوئی۔ ریاست کے جوائنٹ چیف رٹرننگ افسر رمیش چندر رائے نے بتایا کہ لوک سبھا کی دونوں سیٹوں پر ہوئے ضمنی الیکشن کے لئے پولنگ پانچ بجے ختم ہوگئی۔ لائن میں کھڑے رائے دہندگان کو ووٹ ڈالنے دیا گیا۔ پولنگ کے دوران کسی ناخوشگوار واقعہ کی اطلاع نہیں ہے۔

سب سے چونکانے والے کم ووٹ نائب وزیراعلی کیشو پرساد موریہ کے وقار کا سوال بنی پھولپور لوک سبھا سیٹ میں ڈالے گئے۔ پھولپور سیٹ پر ہوئی پولنگ کا فیصد 37.39رہا جبکہ گورکھپور لوک سبھا سیٹ پر پولنگ 43فیصد رہی۔ انہوں نے بتایا کہ دونوں لوک سبھا سیٹ کے لئے پولنگ صبح سات بجے شروع ہوئی جو شام پانچ بجے تک چلی۔

یوپی ضمنی انتخابات : کم ہوئی پولنگ ، گورکھپور میں 43 فیصد تو پھولپور میں صرف 37.39 فیصد ووٹنگ

گورکھپورسیٹ وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ اور پھولپور نائب وزیراعلی کیشو پرساد موریہ کی ساکھ سے جڑی ہے۔ گورکھپور میں مسٹر یوگی پانچ بار رکن پارلیمان منتخب ہوئے تھے جبکہ پہلے وزیراعظم پنڈت جواہر لال نہرو کی سیٹ رہی پھولپور کو مسٹر موریہ نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ٹکٹ پر پہلی بار 2014کے الیکشن میں جیتا تھا۔

ضمنی الیکشن میں 4728ای وی ایم کنٹرول یونٹ ، 7098بیلٹ یونٹ اور 4728وی وی پی اے ٹی تیار کئے گئے تھے۔ تمام پولنگ مراکز پر وی وی پی اے ٹی لگائے گئے تھے۔ وی وی پی اے ٹی لگ جانے سے رائے دہندگان کو پتہ چل سکا کہ جس امیدوار کے سامنے والے کھانے کا بٹن دبایا ہے ووٹ اسی کو گیا ہے۔

ریاست کی اہم اپوزیشن جماعت سماج وادی پارٹی (ایس پی) ، بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) سمیت کئی جماعتوں نے ای وی ایم میں چھیڑچھاڑ کا اندیشہ ظاہر کیا تھا۔ اس کے بعد الیکشن کمیشن نے تمام ای وی ایم میں وی وی پی اے ٹی لگانے کا فیصلہ کیا۔

گورکھپور سیٹ یوگی آدتیہ ناتھ کے استعفی سے خالی ہوئی تھی۔ انتخابی میدان میں مجموعی طورپر دس امیدوار ہیں لیکن اہم مقابلہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے امیدوار اپیندر شکل اور بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کے نشاد ، پیس پارٹی کی حمایت یافتہ سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے امیدوار پروین نشاد کے درمیان ہے۔ کانگریس کی امیدوار ڈاکٹر سرہیتا کریم کی موجودگی نے الیکشن کو سہ رخی کردیا ہے۔ مرکزی وزیرمملکت برائے خزانہ شیوپرتاپ شکل نے اپنی اہلیہ محترمہ جانکی دیوی کے ساتھ گورکھپور شہر میں واقع سینٹ اینڈریو کالج پولنگ مرکز پر اپنا ووٹ ڈالا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز