اترپردیش : تین دنوں تک کلینک میں بند کرکے 13 سالہ بچی کی آبروریزی کرتا رہا ڈاکٹر ! ، گرفتار

اترپردیش کے مظفر نگر ضلع میں ایک 13 سال کی بچی کی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ۔ اس بچی کو مبینہ طور پر ڈاکٹر نے تین دنوں تک اپنی کلینک پر یرغمال بناکر رکھا تھا ۔

Apr 22, 2018 05:07 PM IST | Updated on: Apr 22, 2018 05:07 PM IST

مظفر نگر : اترپردیش کے مظفر نگر ضلع میں  ایک 13 سال کی بچی کی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ۔ اس بچی کو مبینہ طور پر ڈاکٹر نے تین دنوں تک اپنی کلینک پر یرغمال بناکر رکھا تھا ۔ سرکل افسر ایس کے ایس پرتاپ نے بتایا کہ ہفتہ کو بچی ڈاکٹر کے چنگل سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئی ، جس کے بعد اس نے گھر جاکر اپنے والد کو پورے واقعہ کی معلومات دی۔

افسر نے بتایا کہ لڑکی کے والد نے اس معاملہ میں پولیس میں شکایت درج کرائی ہے ، جس کی بنیاد پر ڈاکٹر سونو ورما کو گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ ڈاکٹر کی کلینک سے قابل اعتراض چیزیں بھی برآمد کی گئی ہیں ، کلینک کو سیل کردیا گیا ہے۔

اترپردیش : تین دنوں تک کلینک میں بند کرکے 13 سالہ بچی کی آبروریزی کرتا رہا ڈاکٹر ! ، گرفتار

علامت تصویر

پولیس کے مطابق بچی کلینک میں کچھ دوائیں لینے کیلئے گئی تھی ، تبھی ڈاکٹر نے اس کو یرغمال بنالیا ۔ لڑکی کے والد نے بتایا کہ بچی کے لاپتہ ہونے کے بعد اس نے مقامی لوگوں کے ساتھ مل کر آس پاس کے علاقوں میں بھی اس کی تلاش کی تھی۔پولیس افسر نے بتایا کہ معاملہ کی جانچ کی جارہی ہے اور بچی کو میڈیکل جانچ کیلئے بھیج دیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز