اتراکھنڈ : ہائی کورٹ کا ریاستی حکومت کو مدرسوں کو 31 مارچ تک مالی امداد فراہم کرانے کا حکم

اتراکھنڈ ہائی کورٹ نے مدرسوں کو مالی امداد نہیں ملنے کے معاملے میں ریاستی حکومت کو ہدایت دی ہے کہ مدرسوں کو 31 مارچ 2018 تک مالی امداد دستیاب کرایا جائے۔

Dec 13, 2017 10:57 PM IST | Updated on: Dec 13, 2017 10:57 PM IST

نینی تال : اتراکھنڈ ہائی کورٹ نے مدرسوں کو مالی امداد نہیں ملنے کے معاملے میں ریاستی حکومت کو ہدایت دی ہے کہ مدرسوں کو 31 مارچ 2018 تک مالی امداد دستیاب کرایا جائے۔ معاملے کی سماعت کے بعد جج يوسي دھياني کی یک رکنی بنچ نے ریاستی حکومت کو 31 مارچ 2018 تک مالی امداد فراہم کرنے کی ہدایت دی ہے۔

ادھم سنگھ نگر کے کیلاکھیڑا میں واقع مدرسہ جامعہ ہدایت الاسلام اور دیگر آٹھ مدارس نے ہائی کورٹ میں عرضی دائر کرکے کہا تھا کہ حکومت مدارس میں پڑھنے والے بچوں کی دیکھ بھال اور تعلیم کے لئے انہیں ہر سال مالی امداد فراہم کرتی ہے لیکن اس سال ابھی تک امدادی رقم دستیاب نہیں کرائی گئی ہے۔ حکومت کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ حکومت نے ان معاملات کے لئے ایک کمیٹی قائم کی ہے۔

اتراکھنڈ : ہائی کورٹ کا ریاستی حکومت کو مدرسوں کو 31 مارچ تک مالی امداد فراہم کرانے کا حکم

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز