اتراکھنڈ ہائی کورٹ کا حکم، ملک کی دو ندیوں گنگا جمنا کو دیں زندہ شخص کا درجہ

Mar 21, 2017 09:31 AM IST | Updated on: Mar 21, 2017 09:35 AM IST

دہرادون۔ اتراکھنڈ ہائی کورٹ نے پیر کو ایک تاریخی فیصلے میں ملک کی دو ندیوں گنگا اور جمنا کو 'زندہ انسان کا درجہ' دینے کا حکم دیا ہے۔ ہائی کورٹ کے جسٹس راجیو شرما اور جسٹس آلوک سنگھ کی ایک بینچ نے اپنے حکم میں دونوں مقدس ندیوں گنگا اور جمنا کے ساتھ 'زندہ انسان' کی طرح برتاؤ کئے جانے کا حکم دیا۔

ایڈووکیٹ ایم سی پنت کی دلیلوں سے اتفاق کرتے ہوئے کورٹ نے اس سلسلے میں نیوزی لینڈ کی وانكئی ندی کی بھی مثال دی جسے اس طرح کا درجہ دیا گیا ہے۔

اتراکھنڈ ہائی کورٹ کا حکم، ملک کی دو ندیوں گنگا جمنا کو دیں زندہ شخص کا درجہ

ہردوار رہائشی محمد سلیم کی طرف سے دائر کی گئی ایک پٹیشن پر دیے اس حکم میں عدالت نے دہرادون کے ضلع مجسٹریٹ کو ڈھكرانی میں گنگا کی شکتی نہر سے اگلے 72 گھنٹوں میں تجاوزات ہٹانے کے بھی احکامات دیئے ہیں اور کہا ہے کہ اس پر عمل نہ ہونے کی صورت میں انہیں معطل کر دیا جائے گا۔

پٹیشن میں دلیل دی گئی تھی کہ ان مقدس ندیوں سے اتراکھنڈ اور اتر پردیش دونوں ریاستیں جڑی ہوئی ہیں، لیکن پھر بھی ان کی معاون ندیوں کی جائیداد کی مؤثر تقسیم نہیں ہو پائی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز