بھگوان رام کی آرتی کرنے والی مسلم خواتین اسلام سے خارج: دارالعلوم دیوبند

Oct 21, 2017 03:32 PM IST | Updated on: Oct 21, 2017 03:32 PM IST

دیوبند۔ معروف دینی ادارہ دارالعلوم دیوبند نے ہفتہ کے روز ایک فتوی جاری کرتے ہوئے کچھ خواتین کو اسلام سے خارج کر دیا ہے۔ ان خواتین نے وارانسی میں دیوالی کے دن بھگوان رام کی آرتی کی تھی جسے دارالعلوم گناہ سمجھتا ہے۔ دیوبند کے علماء نے ایسی خواتین کو اسلام سے خارج کر دیا ہے۔ اس معاملہ میں دارالعلوم زکریا کے چئیرمین مفتی ارشد فاروقی سمیت دیگر علمائے کرام نے کہا کہ مسلمان صرف اللہ کی عبادت کرسکتے ہیں۔

جن خواتین نے دوسرے مذہبی عقائد کو اختیار کرتے ہوئے یہ سب کیا ہے وہ اسلام سے خارج ہیں۔ اسلام میں اللہ کے سوا کسی دوسرے مذہب کے ساتھ محبت اور نرمی تو برتی جا سکتی ہے لیکن پوجا نہیں کی جا سکتی ہے۔ اس لئے بہتر ہے کہ وہ اپنی غلطی مان کر دوبارہ کلمہ پڑھ کر اسلام میں داخل ہوں۔ بتا دیں کہ وزیر اعظم مودی کے پارلیمانی حلقہ وارانسی میں مسلم خواتین نے دیوالی کے موقع پر رام کی آرتی اتاری اور ہنومان چالیسا کا پاٹھ کیا تھا۔ ان خواتین نے دیپ جلا کر دیپاولی کا پرو منایا۔

بھگوان رام کی آرتی کرنے والی مسلم خواتین اسلام سے خارج: دارالعلوم دیوبند

بھگوان رام کی آرتی کرتیں مسلم خواتین کی فائل فوٹو۔

یہ مسلم خواتین رام کو اپنے عقیدہ کا مرکز مانتی ہیں اور ہر سال دیپاولی کے موقع پر وہ ان کی آرتی اتارنے کے ساتھ ہنومان چالیسا کا پاٹھ کر دیپ جلاتی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز