وینکیا نائیڈو کبھی چپكاتے تھے پوسٹر، آج ہیں نائب صدر کے عہدے کے امیدوار

Jul 18, 2017 08:39 AM IST | Updated on: Jul 18, 2017 08:39 AM IST

نئی دہلی۔ ستر کی دہائی میں جب بی جے پی کی پیشرو تنظیم جن سنگھ اپنی شناخت بنا ہی رہی تھی اور جنوب میں اس کی کوئی بنیاد نہیں تھی، تب آندھرا پردیش کا ایک نوجوان پارٹی کارکن اٹل بہاری واجپئی اور لال کرشن اڈوانی جیسے قدآور لیڈروں کے پوسٹر لگانے میں مصروف رہتا تھا۔ سیاسی کارکن کے ان دنوں سے طویل فاصلے طے کرکے وینکیا نائیڈو پیر کو این ڈی اے کے نائب صدر کے عہدے کے امیدوار منتخب ہونے تک پہنچے ہیں۔ اس عہدے پر ان کا قابض ہونا طے مانا جا رہا ہے۔

آندھرا پردیش کے نیلور ضلع کے ایک سیدھے سادے خاندان سے تعلق رکھنے والے بی جے پی کے سابق قومی صدر نائیڈو کو ان کی تقریری صلاحیت کے لئے جانا جاتا ہے۔ آندھرا پردیش اسمبلی میں دو بار رکن رہ چکے نائیڈو کبھی لوک سبھا کے رکن نہیں رہے۔ حالانکہ وہ تین بار کرناٹک سے راجیہ سبھا میں پہنچ چکے ہیں اور فی الحال ایوان بالا میں ہی راجستھان کی نمائندگی کر رہے ہیں۔

وینکیا نائیڈو کبھی چپكاتے تھے پوسٹر، آج ہیں نائب صدر کے عہدے کے امیدوار

تصویر: پی ٹی آئی

وزیر اعظم نریندر مودی نے پیر کو نائیڈو کو نائب صدر کے عہدہ کا امیدوار منتخب ہونے کے بعد ان کے لئے تیلگو کا لفظ 'گارو' استعمال کیا جو کسی کو احترام دینے کے لئے بولا جاتا ہے۔ مودی نے ٹویٹ کیا، ایم وینکیا نائیڈو گارو عوامی زندگی میں سالوں کا تجربہ رکھتے ہیں اور ہر سیاسی طبقے میں پسند کئے جاتے ہیں۔ ' ایک وقت اڈوانی کے قریبی رہے نائیڈو نے 2014 کے عام انتخابات سے قبل وزیر اعظم کے عہدے کے لئے مودی کی زوردار حمایت کی تھی۔

نائیڈو فی الحال وزارت اطلاعات ونشریات اور شہری ترقی کی وزارتوں کا کام کاج سنبھال رہے ہیں۔ وہ مودی حکومت میں پارلیمانی امور کے وزیر بھی رہ چکے ہیں۔ اٹل بہاری واجپئی کے وقت این ڈی اے کی پہلی حکومت میں 68 سالہ نائیڈو دیہی ترقی کے وزیر رہے۔ وہ جولائی 2002 سے اکتوبر 2004 تک مسلسل دو مدت میں بی جے پی کے قومی صدر رہے۔ 2004 کے لوک سبھا انتخابات میں پارٹی کی شکست کے بعد انہوں نے عہدہ چھوڑ دیا۔ ایمرجنسی کے وقت نائیڈو اے بی وی پی کے کارکن رہے اور جیل میں بھی رہے۔

مودی حکومت میں پارلیمانی امور کے وزیر کے ناطے انہوں نے پارلیمنٹ میں حکومت اور اپوزیشن کے درمیان تعطل کی صورت میں سونیا گاندھی سمیت اپوزیشن کے رہنماؤں سے رابطہ کر کے تعطل کو دور کرنے کی کوشش کی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز