فرخ آباد کی جیل میں قیدیوں اور پولیس اہلکاروں کے درمیان پرتشدد جھڑپیں، جیل سپرنٹنڈنٹ سمیت کئی زخمی

یوپی کے فرخ آباد میں واقع ضلع جیل میں قیدیوں اور سیکورٹی اہلکاروں کے درمیان پرتشدد جھڑپ کی خبر ہے۔

Mar 26, 2017 04:42 PM IST | Updated on: Mar 26, 2017 08:59 PM IST

فرخ آباد :اتر پردیش کے فرخ آباد کی ضلع جیل میں قیدیوں اور محافظوں کے درمیان خونی جھڑپ ہوئی ہے۔ اس کے بعد جیلر ڈی پی سنگھ کو ڈی ایم نے فوری طور پر ہٹا دیا ہے۔ ڈی ایم اور ایس پی نے قیدیوں سے بات چیت کی اور انہیں سمجھایا، جس کے بعد 7 گھنٹے بعد قیدی جیل کی چھت سے اتر کر اپنی بیرک میں واپس لوٹ گئے۔

جھڑپ کے دوران قیدیوں نے سیکورٹی اہلکاروں اور جیل حکام پر جم کر پتھراؤ بھی کیا۔اس تشدد میں سی ڈی او فرخ آباد بری طرح زخمی ہو گئے۔ پتھراؤ میں جیل سپرنٹنڈنٹ بھی زخمی ہو ئے ہیں۔ دونوں کو ضلع اسپتال ریفر کردیا گیا۔ حالت نازک ہونے پر دونوں کو رام منوہراسپتال میں داخل کرایا گیا۔

فرخ آباد کی جیل میں قیدیوں اور پولیس اہلکاروں کے درمیان پرتشدد جھڑپیں، جیل سپرنٹنڈنٹ سمیت کئی زخمی

بتایا جا رہا ہے کہ راجےپور علاقہ کا ایک قیدی کئی دنوں سے جیل کے اسپتال میں داخل تھا۔ جیل کے ڈاکٹر نیرج کمار نے ہفتہ کو طبیعت صحیح ہونے پر اس کو ڈسچارج کر دیا، جس کی قیدی مخالفت کر رہے تھے۔ اسی بات سے مشتعل قیدیوں نے سپاہی سے مار پیٹ شروع کر دی۔ جب جیل انتظامیہ نے سختی کی تو قیدی متحد ہو گئے اور پولیس پر پتھراؤ شروع کر دیا۔

خیال رہے کہ ایسا پہلی مرتبہ نہیں ہوا ہے کہ قیدیوں نے تلاشی کی مخالفت میں اس طرح کے تشدد کو انجام دیا ہو۔ اس کی وجہ یہ بھی مانی جا رہی ہے کہ جیل میں وصولی کو لے کر پولیس اہلکار قیدیوں کو پہلے سہولیات مہیا کراتے ہیں، پھر جانچ کے نام پر ان سے مزید وصولی کی جاتی ہے۔ اسی بات کو لے کر قیدی اکثر مخالفت کرنے لگتے ہیں۔

Loading...

پولیس پر بھی پتھراؤ

ایسا ہی کچھ ڈسٹرکٹ جیل میں قیدی اور پولیس کی تلاشی کے دوران ہوا۔ دراصل راجےپور علاقہ کے قیدی اتل دفعہ 302 اور 376 کا ملزم ہے۔ کافی دنوں سے جیل کے اسپتال میں وہ داخل تھا۔ جیل کے ڈاکٹر نیرج کمار نے ہفتہ کو طبیعت صحیح ہونے کی وجہ سے ڈسچارج کر دیا۔اتل اس کی مخالفت کر رہا تھا۔ اسی کو لے کر تنازعہ شروع ہوا۔ یہ تنازع اتنا بڑھا کہ اتل نے سپاہی سے مار پیٹ کر دی۔ اس کے بعد جب جیل انتظامیہ نے سختی کی تو قیدی متحد ہو گئے اور پولیس پر پتھراؤ شروع کر دیا۔ اس میں گیٹ نمبر 2 کو آگ کے حوالے کر دیا، جس سے پولیس اہلکار اندر داخل نہ ہوسکے۔

گھنٹوں تک پولیس نہیں گھس پائی اندر

گھنٹوں پولیس اہلکاروں کو قیدیوں نے اندر نہیں آنے دیا۔ جب جیل انتظامیہ جیسے تیسے اندر داخل ہوئی ،تو قیدیوں نے ان پر پتھراؤ شروع کیا۔ جیل سپرنٹنڈنٹ آر کے شرما، سیکورٹی اہلکارسنتوش اور ایک دیگر افسر پتھر لگنے سے زخمی ہو گئے۔ ان کو رام منوہر لوہیا اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔اس دوران قیدی راجیش ٹاور پر چڑھ رہا تھا۔ وہاں سے گر جانے کی وجہ سے وہ بھی زخمی ہوگیا۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز