یوگی کے گورکھپور میں ووٹوں کی گنتی کے لئے لگائی 'مُردوں' کی ڈیوٹی

گورکھپور لوک سبھا ضمنی الیکشن کے ووٹوں کی گنتی کے لئے دو 'مُردوں' کی بھی ڈیوٹی لگا دی گئی ہے۔

Mar 14, 2018 12:14 PM IST | Updated on: Mar 14, 2018 12:15 PM IST

گورکھپور۔ اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کا علاقہ ہونے کی وجہ سے ملک بھر میں لوگوں کی نگاہیں گورکھپور لوک سبھا ضمنی الیکشن پر لگی ہوئی ہیں۔ ایک اور وجہ ہے جس سے یہ علاقہ سرخیوں میں ہے۔ یہاں ووٹوں کی گنتی کے لئے دو 'مُردوں' کی بھی ڈیوٹی لگا دی گئی ہے۔

دراصل، گنتی کے لئے ان لوگوں کو بھی ڈیوٹی پر لگا دیا گیا ہے جن کی موت ہو چکی ہے۔ ضلع انتظامیہ نے ووٹنگ کی ڈیوٹی میں بھی ایسی ہی غلطی کی تھی۔ تاہم، غلطی سے سبق لینے کے بجائے حکام نے اسے دہرا دیا ہے۔ ووٹوں کی گنتی میں ان لوگوں کی ڈیوٹی لگائی گئی ہے جو انتقال کر چکے ہیں۔

یوگی کے گورکھپور میں ووٹوں کی گنتی کے لئے لگائی 'مُردوں' کی ڈیوٹی

ملک بھر میں لوگوں کی نگاہیں گورکھپور لوک سبھا ضمنی الیکشن پر لگی ہوئی ہیں۔

اس معاملہ کو لے کر ریاستی ملازمین مشترکہ کونسل نے ضلع الیکشن افسر سے شکایت درج کرائی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ پبلک ورکس ڈیپارٹمنٹ کے جونیئر انجینئر راکیش کمار اور انل کمار کی ایک سال پہلے موت ہو چکی ہے۔ اس کے بعد بھی ووٹوں کی گنتی میں ان کی ڈیوٹی لگا دی گئی ہے۔

گورکھپور کے 19.4 9 لاکھ ووٹرز میں سے 9.34 لاکھ ووٹروں نے اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا ہے۔ یہاں پہلی بار گورکھناتھ پیٹھ سے باہر کا کوئی شخص مقابلہ کر رہا ہے۔ بی جے پی سے اپیندر دت شکلا، ایس پی سے پروین نشاد اور کانگریس سے ڈاکٹر سریتا کریم میدان میں ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز