خاتون نے خاتون پر لگایا ریپ کا الزام ، لیکن پولیس نہیں کر پا رہی کیس درج

ہم جنس پرستی کو جرائم کے زمرہ سے باہر کرنے کے سپریم کورٹ کے تاریخی فیصلہ کے کچھ ہی دن بعد 25 سال کی ایک خاتون نے دوسری خاتون پر ریپ کا الزام عائد کیا ہے ۔

Oct 03, 2018 01:48 PM IST | Updated on: Oct 03, 2018 01:49 PM IST

ہم جنس پرستی کو جرائم کے زمرہ سے باہر کرنے کے سپریم کورٹ کے تاریخی فیصلہ کے کچھ ہی دن بعد 25 سال کی ایک خاتون نے دوسری خاتون پر ریپ کا الزام عائد کیا ہے ۔ حالانکہ وہ کیس درج کرانے میں ناکام رہی ۔ متاثرہ خاتون مشرقی ہندوستان سے کام کے سلسلہ میں دہلی آئی تھی ۔

خاتون کا دعوی ہے کہ 19 سالہ ملزم خاتون نے کئی مرتبہ اس کا ریپ کیا اور اس کے ساتھ مار پیٹ بھی کی ۔ خاتون کا الزام ہے کہ دہلی کی سیما پوری تھانہ پولیس نے ملزم کو گرفتار کرنے سے انکار کردیا اور اس کے بعد بھی اس کا استحصال جاری رہا ۔

خاتون نے خاتون پر لگایا ریپ کا الزام ، لیکن پولیس نہیں کر پا رہی کیس درج

علامتی تصویر

Loading...

نیوز18 سے بات چیت کرتے ہوئے خاتون نے کہا کہ میں نے سیما پوری پولیس اسٹیشن میں اس کے خلاف کیس درج کرنے کیلئے کہا تھا ، لیکن انہوں نے شکایت درج کرنے سے انکار کردیا ۔ یہاں تک کہ انہوں نے مجسٹریٹ کے سامنے بھی اس بات کا ذکر کرنے سے انکار کردیا تھا ، لیکن پھر بھی میں نے اس کا تذکرہ کیا ۔

چھبیس ستمبر کو سی پی سی کی دفعہ 164 کے تحت کڑکڑڈوما ضلع عدالت میں مجسٹریٹ کے ذریعہ ملزمہ کا بیان درج کیا گیا ۔

دیبائن رائے کی رپورٹ

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز