''خوش قسمت ہوں کہ میں عام آدمی کی بیٹی نہیں ہوں ... کہ نہ تو میرا ریپ ہوا اور نہ ہی میں مردہ پائی گئی"

Aug 06, 2017 03:00 PM IST | Updated on: Aug 06, 2017 03:00 PM IST

چنڈی گڑھ :ـ بی جے پی کی ہریانہ یونٹ کے صدر سبھاش برالا کے بیٹے کو ریاست میں تعینات ایک سینئر آئی اے ایس افسر کی بیٹی کا پیچھا کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا ۔ تاہم بعد میں اسے محض 16 گھنٹوں میں ہی ضمانت پر رہا کردیا گیا ۔ اس سلسلہ میں متاثرہ لڑکی نے چندی گڑھ پولیس کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے اسے بچالیا۔ ساتھ ہی ساتھ لڑکی نے کہا کہ اچھا ہوا وہ ایک عام آدمی کی بیٹی نہیں ہے، ورنہ اس معاملہ کو اتنی سنجیدگی سے نہیں لیا جاتا۔

متاثرہ لڑکی نے اپنی فیس بک پوسٹ میں کہا ہے کہ 'ایسا لگ رہا ہے کہ میں خوش قسمت ہوں کہ میں عام آدمی کی بیٹی نہیں ہوں ... میں اس لئے بھی خوش قسمت ہوں کہ نہ تو میرا ریپ ہوا اور نہ ہی میں مردہ پائی گئی ۔

''خوش قسمت ہوں کہ میں عام آدمی کی بیٹی نہیں ہوں ... کہ نہ تو میرا ریپ ہوا اور نہ ہی میں مردہ پائی گئی

لڑکی نے اپنی درد بھری داستان بتاتے ہوئے کہا کہ اس رات وہ اس کی گاڑی کے اتنا قریب اپنی گاڑی چلا رہے کہ وہ بری طرح ڈر گئی تھی کہ اس کی کار کو ٹکر تک لگ سکتی ہے۔ متاثرہ نے کہا میرے ہاتھ کانپ رہے تھے ... میری پیٹھ مکمل طور اینٹھ چکی تھی، میں بے حس ہوگئی تھی .. اور میرے آنسو لگاتار بہہ رہے تھے ... میں نہیں جانتی تھی کہ میرے ساتھ آج کی رات کیا ہونے والا ہے، کون جانتا تھا کہ پولیس اہلکار آئیں گے بھی یا نہیں ... ۔

متاثرہ نے اپنی تلخ داستان سناتے ہوئے لکھا کہ وہ گاڑی سے پنچکولہ جا رہی تھی۔ دونوں لوگوں نے اپنی ٹاٹا سفاری اسٹارم ایس یو وی میں اس کا گرین مارکیٹ سیکٹر 26 سے پیچھا کرنا شروع کیا۔ متاثرہ کے مطابق وہ آدھی رات تقریبا 12.15 بجے چندی گڑھ کے سیکٹر 8 سے تنہا کار چلا کر پنچکولہ جا رہی تھی، تبھی دونوں نوجوان اس کا پیچھا کرنے لگے۔ ملزموں نے کئی مرتبہ اپنے ایس یو وی اس کی گاڑی سے قریب قریب ترکردی اور اس کی گاڑی کا راستہ روک کر اسے دوسرے راستے پر آگے بڑھانے کی کوششیں بھی کیں۔ اس کے بعد متاثرہ نے پولیس کنٹرول پینل کو فون کیا اور ایس یو وی کی گاڑی نمبر بتائی ، پولیس نے اطلاع پر ملزموں کی گاڑی چندی گڑھ اور پنچکولہ کی سرحد پر پکڑ لی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز