راہل گاندھی کے علاوہ کسی نے بھی نہیں داخل کیا پرچہ نامزدگی ، بی جے پی اور کانگریس میں لفظی جنگ شدید

Dec 04, 2017 04:46 PM IST | Updated on: Dec 04, 2017 04:46 PM IST

نئی دہلی: کانگریس کے صدر کے عہدہ کے الیکشن کے لئے صرف پارٹی کے نائب صدر راہل گاندھی نے ہی کاغذات نامزدگی داخل کئے ہیں جس سے ان کا صدر بننا طے ہوگیاہے۔ مسٹر گاندھی نے صدر کے عہدہ کے لئے نامزدگی داخل کرنے کے آج آخری دن یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں رٹرننگ افسر ایم رام چندرن کے پاس سابق وزیراعظم منموہن سنگھ کی موجودگی میں کاغذات نامزدگی داخل کئے ۔ اس موقع پر ڈاکٹر سنگھ، پارٹی کے سینئر لیڈر آسکرفرنانڈیز، سشیل کمار شندے، کرناٹک کے وزیراعلی سدا رمیا ، پارٹی کے لیڈر آنند شرما اور جیوتر آدتیہ سندھیا نام تجویز کرنے والوں کے طورپرموجود تھے۔

کاغذات نامزدگی داخل کرنے کاآخری وقت آج تین بجے تھا۔ اس کے بعد رٹرننگ افسر نے پریس کانفرنس میں بتایا کہ مسٹر گاندھی کے علاوہ کسی نے بھی کاغذات نامزدگی داخل نہیں کئے ہیں۔ نامزدگی داخل کرنے کا عمل یکم دسمبر کو شروع ہوا تھا۔ کاغذات کی جانچ کل ہوگی اور نام واپس لینے کی آخری تاریخ 11دسمبر ہے۔ اس کے بعد ہی مسٹر گاندھی کے صدر منتخب ہونے کا باضابطہ اعلان کیا جائے گا۔

راہل گاندھی کے علاوہ کسی نے بھی نہیں داخل کیا پرچہ نامزدگی ، بی جے پی اور کانگریس میں لفظی جنگ شدید

راہل گاندھی نے صدر کے عہدہ کیلئے نامزدگی داخل کرنے کے آج آخری دن رٹرننگ افسر ایم رام چندرن کے پاس منموہن سنگھ کی موجودگی میں کاغذات نامزدگی داخل کئے ۔

بی جے پی کا کانگریس پر حملہ

ادھر بی جے پی نے راہل گاندھی کے کاغذات نامزدگی داخل کرنے پر رد عمل کا ظاہرکرتے ہوئے کہا کہ یہ محترمہ سونیا گاندھی کی اس فکر مندی کا اشارہ ہے کہ گجرات اور ہماچل پردیش میں پارٹی کی شکست سے پہلے ان کا بیٹا کسی طرح سے پارٹی صدر بن جائے۔بی جے پی کے ترجمان جی وی ایل نرسمہا راؤ نے یہاں کہا کہ گجرات اور ہماچل پردیش کے انتخابات کے نتائج آنے سے پہلے کانگریس مسٹر گاندھی کا عہدہ بڑھانے کی جلدی میں ہے کیونکہ انتخابات میں شکست خوردہ شخص کو اعزاز دینے کا کوئی جوازنہیں رہ جائے گا۔

کانگریس کا جوابی حملہ

کانگریس نے اپنے صدر کے عہدہ کے انتخاب پر سوال اٹھانے کے لئے وزیر اعظم مودی اور بی جے پی کو آڑے ہاتھ لیتے ہوئے کہا کہ دوسروں پر انگلی اٹھانے سے پہلے انہیں اپنے گریبان میں جھانکنا چاہئے۔ پارٹی ہیڈکوارٹر میں آج یہاں صدر کے عہدے کے لئے کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی کے کاغذات نامزدگی داخل کئے جانے کے بعد کانگریس کے سینئر لیڈروں نے نامہ نگاروں سے کہا کہ جو بی جے پی مکمل طور پر آر ایس ایس کے ‍ ذریعہ چلائی جاتی ہے وہ کانگریس کے جمہوری عمل پر سوال اٹھائے، تو اس سے بڑا مذاق اور کچھ نہیں ہو سکتا۔ کانگریسی لیڈروں نے کہا کہ بی جے پی صدر امت شاہ کا انتخاب کیسے ہوا یہ سب جانتے ہیں۔

راہل گاندھی پارٹی کے ہردلعزیز لیڈر : منموہن سنگھ

سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے مسٹر راہل گاندھی کے کاغذات نامزدگی داخل کرنے پر کہا کہ وہ پارٹی کے ہردلعزیز لیڈر ہیں اور وہ پارٹی کی عظیم روایات کو آگے بڑھائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ "محترمہ سونیا گاندھی نے 19 سال تک پارٹی کی خدمت کی ہے اور عظیم روایات کو آگے لے جانے کی سمت میں یہ ایک اہم قدم ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز