ایکسپریس وے بنا میدان جنگ، جنگی طیاروں نے حیرت انگیز مہارت کا نمونہ پیش کیا

فضائیہ کے جیگوار، میراج اور سکھوئی جیسے جنگی ، طیارہ اور مال بردار طیارہ سی -130 نے لکھنؤ-آگرہ ایکسپریس وے پر اناؤ کے بانگرمئو کے پاس تین کلومیٹر حصے کا ہوائی پٹی کے طور پر استعمال کرتے ہوئے اس پر ’لینڈنگ اور ٹیک آف‘ کرکے ایئر فورس کی تیاریوں کا نمونہ پیش کیا۔

Oct 24, 2017 03:49 PM IST | Updated on: Oct 24, 2017 03:49 PM IST

اناؤ۔ لکھنؤ۔ آگرہ ایکسپریس وے آج کچھ دیر کے لئے میدان جنگ میں تبدیل ہو گیا جہاں فضائیہ کے جنگی طیاروں کے بیڑے کی ریڑھ کی ہڈی مانے جانے والے اہم طیاروں میں ہرکیولس طیارہ نے اپنے جوہر اور حیرت انگیز مہارت کا نمونہ پیش کرتے ہوئے ملک کے باشندوں کو اس بات کا یقین دلایا کہ وہ جنگ اور امن کے وقت میں کسی بھی طرح کی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کے لئے پوری طرح تیار ہیں۔ فضائیہ کے جیگوار، میراج اور سکھوئی جیسے جنگی ، طیارہ اور مال بردار طیارہ سی -130 نے لکھنؤ-آگرہ ایکسپریس وے پر اناؤ کے بانگرمئو کے پاس تین کلومیٹر حصے کا ہوائی پٹی کے طور پر استعمال کرتے ہوئے اس پر ’لینڈنگ اور ٹیک آف‘ کرکے ایئر فورس کی تیاریوں کا نمونہ پیش کیا۔

اتر پردیش کی حکومت اور ایئر فورس کی اس مشترکہ مہم کے تحت 15 جنگی طیاروں اور ایک ہرکیولس طیارے نے اپنے کارنامے دکھائے جس سے ایکسپریس وے کا یہ حصہ زمین سے لے کر آسمان تک کانپ اٹھا۔ 3.3 کلومیٹر طویل اور ایکسپریس وے کے 33 میٹرچوڑے علاقے حصے کو خاص طور پر تیار کیا گیا تھا۔

ایکسپریس وے بنا میدان جنگ، جنگی طیاروں نے حیرت انگیز مہارت کا نمونہ پیش کیا

ہرکیولس طیارہ سی -130 نے مہم کا آغاز کرتے ہوئے فضائیہ کے جانباز دستے گروڑ کے کمانڈو اور ان کی گاڑیوں کو ایکسپریس وے پر اتارا۔

ہرکیولس طیارہ سی -130 نے مہم کا آغاز کرتے ہوئے فضائیہ کے جانباز دستے گروڑ کے کمانڈو اور ان کی گاڑیوں کو ایکسپریس وے پر اتارا۔ کمانڈوز نے پلک جھپکتے ہی دشمن کے خلاف ایکسپریس وے کے دونوں طرف اپنے محاذ سنبھال لیے اور صورت حال کو قابو میں کرنے کے لئے محاصرہ کر لیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز