یاسین ملک گرفتار، میرواعظ نظر بند، سید علی شاہ گیلانی کو راحت نہیں

Nov 18, 2017 01:11 PM IST | Updated on: Nov 18, 2017 01:11 PM IST

سرینگر۔ جموں و کشمیر میں علیحدگی پسند لیڈر محمد یاسین ملک کو آج صبح گرفتار کر لیا گیا اور اعتدال پسند حریت کانفرنس (ایچ سی ) کے صدر میر واعظ مولوی عمر فاروق کو کل دیر رات نظربند کر دیا گیا۔ علاحدگی پسند لیڈر سید علی شاہ گیلانی کو کوئی راحت نہیں ملی ہے اور وہ گزشتہ کئی ماہ سے نظربند ہیں۔ جموں کشمیر لبریشن فرنٹ (جےكے ایل ایف ) کے ترجمان نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز کی ایک ٹیم نے ملک کو ان کی ماسومہ میں واقع رہائش گاہ سے آج صبح گرفتار کیا اور بعد میں ملک کو سری نگر سینٹرل جیل بھیج دیا گیا ہے۔

اس دوران ایچ سی کے ترجمان نے کہا کہ میر واعظ کے گھر کے باہر گزشتہ رات سے کافی تعداد میں سیکورٹی فورس اور پولیس اہلکار تعینات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایچ سی کے چیئرمین کو بتایا گیا ہے کہ وہ کسی بھی جگہ نہیں جا سکتے کیونکہ انہیں نظربند کیا گیا ہے۔ انتظامیہ نے انہیں نظربند کرنے کی وجوہات نہیں بتائیں لیکن ایسا خیال ہے کہ کل ایک جنگجو کے تصادم میں مارے جانے کے بعد سرینگر میں احتجاج کے پیش نظر انہیں نظربند کیا گیا ہے۔

یاسین ملک گرفتار، میرواعظ نظر بند، سید علی شاہ گیلانی کو راحت نہیں

جموں کشمیر لبریشن فرنٹ (جےكے ایل ایف ) کے ترجمان نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز کی ایک ٹیم نے ملک کو ان کی ماسومہ میں واقع رہائش گاہ سے آج صبح گرفتار کیا اور بعد میں ملک کو سری نگر سینٹرل جیل بھیج دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ جنگجووں کے ساتھ اس تصادم میں ایک پولیس افسر شہید ہو گیا اور ایک خصوصی پولیس افسر (ایس پی او) زخمی ہو گیا۔ اس تصادم کے دوران ایک مشتبہ جنگجو کو بھی گرفتار کیا گیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز