کہیں ’داماد‘ تو کہیں ’بیٹا‘ کسانوں کی زمین ہڑپنے میں لگے ہیں: یوگی آدتیہ ناتھ

Oct 10, 2017 08:01 PM IST | Updated on: Oct 10, 2017 08:01 PM IST

امیٹھی۔ اترپردیش کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے نہرو-گاندھی خاندان پر طنز کرتے ہوئے آج کہا کہ کہیں ’داماد‘تو کہیں ’بیٹا‘ کسانوں کی زمین ہڑپنے میں لگے ہیں۔ مسٹر یوگی نے کہا کہ راجیو گاندھی فائونڈیشن کے نام پر سمراٹ سائکل فیکٹری کی زمین ہڑپنے کی کوشش کی جا رہی ہے،لیکن وہ کسانوں سے وعدہ کرتے ہیں کہ ان کی زمین ہڑپنے نہیں دی جائے گی۔زمین پر یا تو فیکٹری لگے گی یا کسانوں کو واپس ہوگی،’داماد تو داماد بیٹا بھی زمین ہڑپنے میں لگ گیا ہے‘۔

قابل ذکر ہے کہ کانگریس صدر سونیا گاندھی کے داماد رابرٹ واڈرا پر زمین کے کاروبار کے سلسلے میں کئی الزامات لگائے جاچکے ہیں۔ مسٹر یوگی نے کہا کہ نوٹوں کی منسوخی کی حمایت کرنے والے شخص کو نوبل ایوارڈ مل گیا،نوٹوں کی منسوخی صحیح ہونے کا اس سے بڑا ثبوت اور کیا ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کو بتانا چاہئے کہ 55سال کے دور اقتدار میں اس نے کیا کیا۔ آج کا پروگرام ایک مہینے پہلے ہی طے ہوگیا تھا۔ اس سے گھبرائے راہل گاندھی نے چار اکتوبر سے اپنا سہ روزہ پروگرام اچانک رکھ دیا۔ کانگریس کو گاؤں،غریب اور کسان سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔

کہیں ’داماد‘ تو کہیں ’بیٹا‘ کسانوں کی زمین ہڑپنے میں لگے ہیں: یوگی آدتیہ ناتھ

انہوں نے اپنی حکومت کے کارناموں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ گاؤں اور شہروں کی برابر ترقی کے لئے کام کئے جارہے ہیں۔ ’سوچھ بھارت ابھیان ‘کے تحت 15ہزار بیت الخلا ہر روز بنائے جارہے ہیں۔ شہری اور دیہی علاقوں میں وزیراعظم رہائش گاہ منصوبے کو حتمی شکل دی جارہی ہے۔ ہر سال چار لاکھ نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرانے کی سمت میں تیزی آگے بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خوش قسمتی ہے کہ نریندر مودی کی شکل میں ملک کو مضبوط قیادت ملی ہے،جس نے پوری دنیا میں ہندوستان کی عزت بڑھائی ہے۔ دنیا میں ملک کو ایک مقام دلایا ہے۔ اب پوری دنیا ماننے لگی ہے کہ ہندوستان ایک بڑی طاقت بن کر ابھر رہا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز