یوگی آدتیہ ناتھ کو جھٹکا ، بی جے پی کی یوپی انتخابی کمیٹی میں نہیں ملی جگہ

Jan 06, 2017 08:46 PM IST | Updated on: Jan 06, 2017 08:46 PM IST

نئی دہلی : بھارتیہ جنتا پارٹی نے اپنی انتخابی کمیٹی میں دوسری جماعتوں سے پارٹی میں آئے رہنماؤں کو تو جگہ دی ہے ، لیکن وزیر اعلی کے عہدہ کے بڑے دعویدار سمجھے جانے والے یوگی آدتیہ ناتھ کو جگہ نہیں دی گئی ہے۔ اس سے بھی دلچسپ بات یہ ہے کہ گورکھپور میں ان کے 'مخالف خیمہ کے لوگوں کو جگہ دی گئی ہے۔ کمیٹی میں پوروانچل کے بڑے لیڈر یوگی کو اس میں جگہ نہ دینے سے قیاس آرائی کا بازار گرم ہوگیا ہے۔ جب جب یوگی کو پارٹی میں توجہ نہیں ملی ہے ، انہوں نے پارٹی کے خلاف کھلے عام آواز اٹھائی ہے۔

راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ شیو پرکاش شکلا سے کبھی یوگی کا چھتیس کا آنکڑا رہا ہے۔ سال 2002 کے اسمبلی انتخابات میں گورکھپور سیٹ سے یوگی نے بی جے پی امیدوار شیو پرتاپ شکلا کے خلاف اپنے خاص شخص رادھا موہن داس اگروال کو ہندو مہاسبھا کے ٹکٹ پر انتخابی میدان میں اتارا تھا۔ یوگی کا وہاں اثر اتنا ہے کہ اگروال الیکشن جیت گئے اور شکلا کو تیسرے نمبر پر اکتفا کرنا پڑا۔ جبکہ شکلا یوپی میں کابینی وزیر رہ چکے تھے۔

یوگی آدتیہ ناتھ کو جھٹکا ، بی جے پی کی یوپی انتخابی کمیٹی میں نہیں ملی جگہ

گورکھپور کے ہی رہنے والے سابق ریاستی صدر رماپتی رام ترپاٹھی کو بھی کمیٹی میں جگہ دی گئی ہے۔ ریاستی صدر کیشو پرساد موریہ نے جو 27 رکنی پردیش الیکشن کمیٹی بنائی ہے، اس میں کیشو پرساد موریہ کے علاوہ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ، ریاستی انچارج اوم پرکاش ماتھر، مرکزی وزیر کلراج مشرا اور اوما بھارتی کو جگہ ملی ہے۔

بی جے پی کے قومی نائب صدر ڈاکٹر دنیش شرما، ارون سنگھ، ڈاکٹر مہندر سنگھ، سنیل بنسل، اوم پرکاش سنگھ، ونے کٹیار، سابق ریاستی صدر سوریہ پرتاپ شاہی، لكشمي كانت واجپئی، سریش کھنہ، سنیل اوجھا، وریندر کھٹک، رمیش بدھوڑی، رامیشور چیرسيا ، سوتنتردیو سنگھ، سواتی سنگھ، سلل وشنوي اور سابق وزیر رما شنکر کٹھیریا کو بھی جگہ دی گئی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز