تین طلاق کا دروپدی کے چیر ہرن سے موازنہ پر یوگی کی شدید تنقید ، مولانا ولی رحمانی نے کہا : چیزوں کو صرف ایک چشمہ سے ہی دیکھتے ہیں یوگی

Apr 17, 2017 06:01 PM IST | Updated on: Apr 17, 2017 06:01 PM IST

لکھنو : اتر پردیش کے وزیر یوگی آدتیہ ناتھ کے ذریعہ تین طلاق کا موازنہ دروپدي کے چيرهرن 'سے کرنے پر علما نے سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ مولانا ولی رحمانی ، مولانا يعسوب عباس اورآل انڈیا مسلم وومین پرسنل لا بورڈ کی صدر شائستہ عنبر نے یوگی آدتیہ ناتھ کی شدید تنقید کی ہے۔

خیال رہے کہ یوگی آدتیہ ناتھ نے پیر کو ایک پروگرام کے دوران تین طلاق کے معاملہ پر مہابھارت میں دروپدي کے چيرهرن کے وقت وہاں موجود لوگوں کی خاموشی کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ تین طلاق پر جو خاموش ہیں وہ مجرموں جیسے ہیں۔ یوگی نے تین طلاق کو بڑا مسئلہ قرار دیتے ہوئے اسے خواتین کے ساتھ ناانصافی بتایا۔

تین طلاق کا دروپدی کے چیر ہرن سے موازنہ پر یوگی کی شدید تنقید ، مولانا ولی رحمانی نے کہا : چیزوں کو صرف ایک چشمہ سے ہی دیکھتے ہیں یوگی

آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے سکریٹری جنرل مولانا ولی رحمانی نے کہا کہ '' ایسے جاہلانہ بیان پر کوئی رائے دینا میں ضروری نہیں سمجھتا۔ طلاق کے مسئلہ کا دروپدي کے چيرهرن سے موازنہ تو کوئی جاہل ہی کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یوگی چیزوں کو صرف ایک چشمہ سے ہی دیکھتے ہیں۔

آل انڈیا شیعہ پرسنل لا بورڈ کے ترجمان مولانا يعسوب عباس نے کہا کہ طلاق اور دروپدي کے چيرهرن میں فرق ہے۔ دونوں کے درمیان موازنہ نہیں کیا جانا چاہیے۔ آل انڈیا مسلم وومین پرسنل لا بورڈ کی صدر شائستہ عنبر نے بھی کہا '' طلاق کے معاملہ کا دروپدي کے چيرهرن سے موازنہ نہیں کیا جانا چاہیے۔ اگر یوگی اسے دلیل کے طور پر پیش کر رہے ہیں ، تو یہاں ہندو خواتین کو بھی جہیز کے لیے جلایا جارہا ہے ۔ وزیر اعظم اور وزیر اعلی کو ان کے مسائل پر بھی ایسا ہی تبصرہ کرنا چاہیے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز