اترپردیش: یوگی کابینہ کا فیصلہ، اس طرح سپلائی کریں گے بجلی

Apr 11, 2017 11:15 PM IST | Updated on: Apr 11, 2017 11:15 PM IST

لکھنئو۔ اتر پردیش میں بجلی سپلائی کو لے کر یوگی آدتیہ ناتھ حکومت نے احکامات جاری کئے ہیں۔ منگل کو کابینہ میں بجلی مسودہ تجویز کو ہری جھنڈی ملنے کے بعد کابینہ وزیر سری کانت شرما نے سپلائی ڈٹیل جاری کی۔ انہوں نے صاف کیا کہ سپلائی کے حکم کو لے کر حیلہ، بہانہ کرنے والے افسروں پر سخت کارروائی ہوگی۔

اس طرح یوپی میں بجلی کی ہوئی تقسیم

اترپردیش: یوگی کابینہ کا فیصلہ، اس طرح سپلائی کریں گے بجلی

یوگی کابینہ نے بجلی سپلائی کو تین سلیب میں تقسیم کیا ہے۔ پہلی سلیب 24، دوسری 20 اور تیسری 18 گھنٹے کی ہے۔ اس کے تحت

مذہبی مقامات کو 24 گھنٹے بجلی ملے گی

ضلع کوراٹر کو 24 گھنٹے

تحصیلوں کو 20 گھنٹے

گاؤں کو 18 گھنٹے

بندیل کھنڈ کو 20 گھنٹے

سری کانت شرما نے بتایا کہ پوری ریاست میں 24 گھنٹے بجلی سپلائی کے لئے کام جاری ہے۔ میٹنگ میں یوگی کابینہ نے کئی اور فیصلے لیے ہیں۔ میٹنگ تین گھنٹے تک جاری رہی۔ اس دوران گڈھا سے پاک سڑکوں اور آلو خریداری کو لے کر بھی حکم جاری کیا گیا۔ آلو کی کم از کم خریداری قیمت طے کی گئی۔ اس کے تحت خریداری کی سرکاری شرح 487 روپے فی کوئنٹل مقرر کی گئی۔

بجلی سمیت یوپی حکومت کے کچھ اور اہم فیصلے

پرانے بلوں پر بجلی سرچارج معاف، 10 ہزار سے زیادہ کی ادائیگی قسطوں میں کی جا سکتی ہے۔

خراب ٹرانسفارمر 48 گھنٹے میں تبدیل کرنے کا حکم، شہروں کے لئے یہ حد 24 گھنٹے۔

آلو کے لئے خریداری مرکز بنانے کا فیصلہ۔ گنا کسانوں کو 14 دن میں کی جائے ادائیگی۔ چار ماہ میں پرانی ادائیگی کرنے کا حکم۔

پندرہ جون تک ریاست کی تمام سڑکوں کوگڈھا سے پاک کرنے کا فیصلہ۔ اس کے لئے یوگی حکومت نے دیے 4 ہزار کروڑ روپے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز