اترپردیش: 2017 کو غریبوں کی بہبود کے سال کے طور پر یوگی حکومت منائے گی

Jun 27, 2017 06:29 PM IST | Updated on: Jun 27, 2017 06:29 PM IST

لکھنؤ۔ اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے سال 2017 کو غریبوں کی بہبود کا سال کے طور پر منانے کا اعلان کرتے ہوئے آج کہا کہ گزشتہ 15 برسوں کی حکومتوں نے اترپردیش کو بدعنوانی اور کنبہ پروری کے ذریعے بدحال کر دیا۔ اپنی حکومت کے 100 دن مکمل ہونے پر مسٹر یوگی نے صحافیوں سے کہا کہ وہ’سب کا ساتھ سب کا وکاس‘ نعرے کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔ ذات اور مذہب کی بنیاد پر کوئی امتیاز نہیں برتا جا رہا ہے۔ بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) اور سماج وادی پارٹی (ایس پی) کا نام لیے بغیر وزیر اعلی نے کہا کہ 14-15 برسوں میں ریاست کو بدعنوانی کے دلدل میں دھکیل دیا گیا۔ کنبہ پروری کا ننگا ناچ کیا گیا۔ امن و قانون کو بہتر بنانے کیلئے ٹھوس اقدامات نہیں کئے گئے۔ نوجوانوں میں جوش بھرنے کیلئے 24 جنوری کو اترپردیش دن منایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت قانون کا راج قائم کرنے کے لئے كڑے قدم اٹھا رہی ہے۔ بغیر امتیاز کے کارروائی کو یقینی بنائی جا رہی ہے۔ قانون کے ساتھ ہی تعلیم کو اپ گریڈ کے لئے کئی اقدامات کررہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ غریبوں کو بااختیار بنانا ان کی حکومت کا مقصد ہے۔ اپنی حکومت کے 100 دن کے کاموں کو دین دیال اپادھیائے کے انتودے یوجنا کے منصوبہ کو پہل بتاتے ہوئے وزیر اعلی نے کہا کہ ریاست کو ترقی کے راستے پر آگے بڑھانا ہے۔ مقصد اور عہد کے ساتھ گڈ گورننس کے قیام کے لئے سنجیدہ کوششیں کی جا رہی ہیں۔ مسٹر یوگی نے کہا کہ گاؤں اور کسان کی ترقی کے لئے ہر ممکن قدم اٹھائے جا رہے ہیں۔ گزشتہ سال کی نسبت چار گنا 36 لاکھ میٹرک ٹن گندم خریدا گیا۔ اس کے لیے پچاس ہزار گندم خریداری مراکز کھولے گئے۔ وعدے کے مطابق چھوٹے اور سرحدی کسانوں کے قرض معاف کئے گئے۔ نئی اور شفاف کان کنی کی پالیسی بنائی گئی۔ بجلی کی فراہمی بہتر کی گئی۔ اجودھیا، دیوی ياٹن جیسے مذہبی مقامات پر 24 گھنٹے بجلی کی فراہمی کو یقینی بنائی گئی۔ غازی آباد میں کیلاش مان سروور عمارت بنائی جا رہی ہے۔

اترپردیش: 2017 کو غریبوں کی بہبود کے سال کے طور پر یوگی حکومت منائے گی

وزیر اعلی نے کہا کہ اینٹی زمین مافیا پورٹل کی مدد سے ہزاروں ہیکٹر زمیں آزاد کرائی گئی۔ مخبر منصوبہ کے ذریعے پیدا ہونے سے پہلے پیٹ میں ہی مار دی جانے والی بیٹیوں کو بچا لیا گیا۔ سیکورٹی کے نظام کو چاق و چوبند کیا گیا۔ بھرتی میں بدعنوانی کو ختم کرکے اسے شفاف بنایا جا رہا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے اس بات پر یقین دہانی کرائی کہ چھوٹے اور درمیانے درجے کے اخبارات پر مکمل توجہ دی جائے گی۔ ان کی حکومت ’سب کا ساتھ سب کاوکاس‘ کو ہی بنیاد مان کر چل رہی ہے۔ اس موقع پر تقسیم کی گئی 48 صفحے کی کتاب میں ریاستی حکومت کی کامیابیوں کی سلسلہ وار تفصیلات بھی دی گئیں۔ وزیر اعظم نریندر مودی اور بھارتیہ جنتا پارٹی کے صدر امت شاہ کی موجودگی میں یوگی آدتیہ ناتھ نے اپنے کابینہ کے ساتھ گذشتہ 19 مارچ کو حلف لیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز