اترپردیش: اقلیتوں کے لئے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے کئے یہ بڑے فیصلے

بتا دیں کہ سی ایم رہائش گاہ پر جنتا دربار میں یوگی سے ملنے آنے والے فریادیوں میں بڑی تعداد مسلم خواتین کی ہی ہوتی ہے۔

Apr 15, 2017 08:47 AM IST | Updated on: Apr 15, 2017 08:47 AM IST

لکھنئو۔ یوگی آدتیہ ناتھ یوپی کے وزیر اعلی بننے کے بعد سے تمام بڑے فیصلے لے کر اپنی شبیہ کو بدلنے کی کوشش میں ہیں۔ یوگی آدتیہ ناتھ کے دربار میں فریادیوں میں مسلم اور ہندو تمام کمیونٹی کے لوگ دکھائی دے رہے ہیں۔ وہ گردوارے میں بھی نظر آتے ہیں۔ اس درمیان انہوں نے اقلیتوں کی فلاح و بہبود کے لئے کئی بڑے فیصلے کئے ہیں۔

بتا دیں کہ سی ایم رہائش گاہ پر جنتا دربار میں یوگی سے ملنے آنے والے فریادیوں میں بڑی تعداد مسلم خواتین کی ہی ہوتی ہے۔ یوگی حکومت نے بھی اقلیتوں کی شادی اور تعلیم کے لئے منصوبوں کا پٹارا کھول دیا ہے۔

اترپردیش: اقلیتوں کے لئے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے کئے یہ بڑے فیصلے

Loading...

اجتماعی شادی

حکومت غریب مسلم لڑکے۔ لڑکیوں کی اجتماعی شادی کرائے گی۔ ریاستی حکومت نے ہر سال ایسی 100 شادیوں کا ہدف طے کیا ہے۔ شادی میں لڑکے کی طرف سے حکومت لڑکی کے خاندان کو مہر کی رقم دیگی۔

مدارس کی تجدیدکاری

یوگی نے اقلیتی کمیونٹی کی تعلیم پر بھی خاصی توجہ دی ہے۔ سب سے پہلا دھیان مدارس کی تجدیدکاری پر ہے۔ 19 ہزار 213 مدارس کے نصاب میں ہندی، انگریزی اور سائنس کے موضوعات شامل ہوں گے۔ اب براہ راست آدھار سے جوڑ کر طالب علموں کے بینک اکاؤنٹس میں اسکالرشپ ملے گی۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز