شمالی کوریا نے جنوبی کوریا کی سابق صدر پارک کو موت کی سزا کی دھمکی دی

Jun 29, 2017 03:14 PM IST | Updated on: Jun 29, 2017 03:14 PM IST

سیول۔  شمالی کوریا نے اپنے لیڈر کم جونگ کے قتل کی مبینہ سازش کے سلسلے میں جنوبی کوریا کی سابق صدر پارک گوین ہے اور ان کے انٹیلی جنس سربراہ کو ’موت کی سزا دینے‘کی دھمکی دی ہے۔ شمالی کوریا کی سرکاری نیوز ایجنسی کے سی این اے نے کہا،’’انکشاف سے پتہ چلا ہے کہ 2015 میں پارک اس کے سربراہ کے قتل کی سازش کرنے والی ماسٹر مائنڈ تھی۔ لہذا غدار پارک اور ان کے انٹیلی جنس سربراہ لی بیونگ ہو کو موت کی سزا سنائی جا رہی ہے۔‘‘ اگرچہ کے سی این اے نے ’’انکشاف‘‘کے ذرائع کی تفصیل نہیں دی لیکن اسی ہفتے ایک جاپانی اخبار نے رپورٹ شائع کی تھی کہ پارک نے 2015 میں شمالی کوریا میں کم جونگ ان کی حکومت کی بغاوت کی منصوبہ بندی کی منظوری دے دی تھی۔

پارک اگرچہ بدعنوانی کے معاملے میں مارچ میں صدر کے عہدے سے ہٹا دی گئی تھیں۔ فی الحال وہ حراست میں ہیں اور ان کے معاملے کی سماعت چل رہی ہے۔ جنوبی کوریا کی قومی انٹیلی جنس ایجنسی (این آئی ایس) نے کہا کہ شمالی کوریا نے اس کےشہریوں کے خلاف دھمکی دے کر’’مذاق‘‘کیا ہے۔ ایجنسی نے کہا کہ کم جونگ ان کو قتل کرنے کی سازش کی خبرکی رپورٹ کی کوئی بنیاد نہیں ہے۔

شمالی کوریا نے جنوبی کوریا کی سابق صدر پارک کو موت کی سزا کی دھمکی دی

شمالی کوریا کے لیڈر کم جونگ ان کی فائل فوٹو: ایسوسی ایٹیڈ پریس

جاپان کے اساہی شنبن اخبار نے گزشتہ پیر کو پارک کی شمالی کوریا پالیسی کو جاننے والے ذرائع کے حوالے سے خبر شائع کی تھی کہ پارک نے شمالی کوریا کے لیڈر کو ہٹانے کے ایک منصوبہ پر دستخط کئے تھے۔ اس منصوبہ کو بنانے والے جنوبی کوریا کے انٹیلی جنس سربراہ تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز