سعودی عرب نے کسی مسلمان کو مسجد حرام میں داخل ہونے سے نہیں روکا: خالد الفیصل

Jun 14, 2017 04:10 PM IST | Updated on: Jun 14, 2017 04:13 PM IST

ریاض۔ خادم حرمین شریفین کے مشیر اور مکہ مکرمہ کے گورنر شہزادہ خالد الفیصل نے وضاحت کی ہے کہ مملکت سعودی عرب نے کسی مسلمان کو مسجد حرام میں داخل ہونے اور وہاں عبادات کرنے سے نہیں روکا، بلکہ مملکت اس ارض مقدس کا رخ کرنے والوں کو تمام خدمات اور سہولیات پیش کرنے کی آرزو رکھتی ہے۔ انہوں نے یہ بات مسجد حرام میں سکیورٹی اہل کاروں اور اللہ کے مہمانوں کی خدمت سے وابستہ اداروں کے ملازمین کے ساتھ افطار میں شرکت کے بعد کہی۔ شہزادہ خالد نے مزید کہا کہ "میں اس مقدس مقام پر معتمرین، نمازیوں اور طواف وسعی کرنے والوں کے لیے خدمات پیش کرنے والے ہر فرد کا تہِ دل سے شکریہ ادا کرتا ہوں"۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق، مکہ کے گورنر نے زور دیا کہ "ہمیں ہر اچھا کام کرنے والے کی ستائش کرنی چاہیے"۔ انہوں نے مسجد حرام اور اس کے زائرین کی حفاظت پر مامور سکیورٹی فورسز اور حرم مکی کے انتظامی امور کو سنبھالنے والی امور حرمین کی جنرل پریذیڈنسی کا بھی خصوصی شکریہ ادا کیا۔

سعودی عرب نے کسی مسلمان کو مسجد حرام میں داخل ہونے سے نہیں روکا: خالد الفیصل

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز