حافظ سعید پاکستانی سماج کے لئے سنگین خطرہ: پاکستانی وزیر دفاع

Feb 21, 2017 03:54 PM IST | Updated on: Feb 21, 2017 03:54 PM IST

اسلام آباد۔  پاکستان کے وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ جماعت الدعوہ کے سربراہ حافظ محمد سعید پاکستانی سماج کے لئے ایک سنگین خطرہ ہوسکتا ہے کیوں کہ دہشت گردی کسی بھی مذہب کا ہم معنی نہیں ہوسکتی۔ مسٹر آصف نے لاہور میں ایک سیکورٹی کانفرنس میں پینل ڈسکشن میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کسی بھی مذہب کا ہم معنی نہیں ہے ۔ دہشت گرد عیسائی ، مسلمان، بودھ یا ہندو نہیں ہوتے وہ دہشت گرد ہیں اور مجرم ہیں۔

وزیر دفاع نے کہا کہ گذشتہ کچھ عرصے سے پاکستان سے کافی غلطیاں ہوئی ہیں لیکن انہوں نے یہ بھی کہا کہ پچھلے تین برسوں میں پاکستانی فوج نے قابل تعریف کام کیا ہے۔  آصف نے ’اسلامی دہشت گردی‘ لفظ کی شدید مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ میں نے آج صبح سے درجنوں بار اسلامی دہشت گردی جیسا لفظ سنا ہے ۔ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ اس کا اکثر استعمال کرتے ہیں اور اس لفظ کا استعمال کرکے اسلام کے نام پر ڈر کا ماحول پیدا کرنا چاہتے ہیں کیوں کہ دہشت گردی کو اسلامی دہشت گرد کے طور پر پیش کیا جار ہا ہے۔ انہوں نے مغرب اور امریکہ کو متنبہ کیا کہ اگر ان کی پالیسیاں علیحدگی پسندانہ رہیں تویہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مدد گار نہیں ہوسکتیں بلکہ ا س سے دہشت گردی کو ہی فروغ ملے گا۔

حافظ سعید پاکستانی سماج کے لئے سنگین خطرہ: پاکستانی وزیر دفاع

رائٹرز

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز