نواز شریف خاندان کے خلاف پاناما کیس میں سپریم کورٹ کا فیصلہ محفوظ

Jul 21, 2017 09:38 PM IST | Updated on: Jul 21, 2017 09:38 PM IST

اسلام آباد:پاکستانی سپریم کورٹ نے وزیر اعظم نواز شریف کے خاندان کے مالی اثاثوں کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کی حتمی رپورٹ پر آج پانچویں روز سماعت میں تمام فریقین کے دلائل سننے کے بعد اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا، جس کے اعلان کی تاریخ بعد میں بتائی جائے گی۔

پاکستانی وزیر اعظم کے بچوں حسن، حسین اور مریم نواز کے وکیل سلمان اکرم راجہ نےجسٹس اعجاز افضل خان کی سربراہی والی سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ کے سامنے اپنے دلائل میں کہاکہ کل عدالت کے ریمارکس میں بادی النظرمیں جعلسازی نظر آنے والی جو بات کہی تھی اس کی وضاحت یہ ہے کہ وہ صرف ایک کلریکل غلطی تھی اور کسی بھی صورت میں جعلی دستاویز دینے کی نیت نہیں تھی اور ماہرین نے غلطی والی دستاویزات کا جائزہ لیا۔ روزنامہ ڈان کی رپورٹ کے مطابق سماعت کے دوران ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ وفاق کا موقف ہے کہ عدالت نے پانچ ماہ کیس سنا اور ہر فریق کو مناسب موقع دیا گیا، جبکہ تحقیقات میں نیا ریکارڈ بھی سامنے آیا۔

نواز شریف خاندان کے خلاف پاناما کیس میں سپریم کورٹ کا فیصلہ محفوظ

گیٹی امیجیز

انہوں نے مزید کہا کہ جے آئی ٹی کی فائنڈنگز عدالت پر لازم نہیں، مجھے یقین ہے کہ عدالت فریقین کے حقوق کا خیال رکھے گی۔جس پر عدالت عظمیٰ نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو آج ہی اپنا تحریری جواب جمع کروانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ عدالت غیر پوشیدگی اور قانون کی حکمرانی کو برقرار رکھے گی۔ اخبار کے مطابق سماعت کے دوران تحریک انصاف کے وکیل نعیم بخاری نے جواب الجواب میں کہا کہ ثابت ہوگیا کہ وزیراعظم صادق اور امین نہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ایف زیڈ ای کمپنی کو وزیراعظم نے ظاہر نہیں کیا اور نہ ہی اس کا چیئرمین ہونا اور تنخواہ وصولی ظاہر کی گئی۔

جماعت اسلامی کے وکیل توفیق آصف نے جواب الجواب میں کہا کہ جے آئی ٹی کی سفارشات کے بعد تمام شکوک و شبہات دور ہو چکے ہیں۔عدالت عظمیٰ نے انہیں ہدایت کی کہ اپنے نکات تحریری طور پر دے دیں۔جماعت اسلامی کے وکیل کی بات کے اختتام کے ساتھ ہی تمام فریقین کے دلائل مکمل ہوگئے، جس کے بعد سپریم کورٹ نے کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا، جس کے اعلان کی تاریخ کی اطلاع بعد میں دی جائے گی۔

واضح رہے کہ پاناما لیکس کے معاملے نے پاکستان کی داخلی سیاست میں اُس وقت ہلچل پیدا ہو گئی جب پچھلے سال اپریل میں بیرون ملک ٹیکس کے حوالے سے کام کرنے والی پاناما کی مشہور لا فرم موزیک فانسیکا کی افشا ہونے والی انتہائی خفیہ دستاویزات سے پاکستان سمیت دنیا کی کئی طاقت ور اور سیاسی شخصیات کے 'آف شور مالی معاملات کی پوشیدگی ختم ہو گئی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز