لشکر حمایت یافتہ سیاسی جماعت کو رجسٹر کرنے سے الیکشن کمیشن کا انکار

Oct 12, 2017 12:26 PM IST | Updated on: Oct 12, 2017 12:26 PM IST

اسلام آباد۔ پاکستان کے الیکشن کمیشن نے دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ حمایت یافتہ نئی سیاسی جماعت کے الیکشن لڑنے پرروک لگا دی ہے۔ کمیشن کے ترجمان ہارون خان نے  یہاں بتایا کہ چار رکنی پینل نے لشکرحمایت یافتہ نئی سیاسی جماعت ملی مسلم لیگ(ایم ایم ایل) کو رجسٹر کرنے سے انکار کردیا۔ مسٹر خان نے بتایا کہ کمیشن کے سربراہ محمد رضاخان نے اس معاملے کی آخری سماعت کے دوران ایم ایم ایل کے وکیل سے کہا کہ ان کی پارٹی دہشت گرد گروپوں سے وابستگی رکھتی ہے جس کی وجہ سے وہ ان کی پارٹی کو رجسٹر نہیں کر سکتے۔

ترجمان نے بتایا کہ کمیشن نے اندرونی وزارت کی سفارشات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایم ایم ایل کی دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ سے وابستگی ہے۔ لشکر پر 2008میں ممبئی بم حملوں میں شامل ہونے کا الزام ہے جس میں 166لوگ مارے گئے تھے۔

لشکر حمایت یافتہ سیاسی جماعت کو رجسٹر کرنے سے الیکشن کمیشن کا انکار

جماعت الدعوة سربراہ حافظ سعید: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز