پاکستان دہشت گردی کے تعلق سے اپنا موقف تبدیل کرے: ٹلرسن

Aug 23, 2017 04:50 PM IST | Updated on: Aug 23, 2017 04:50 PM IST

واشنگٹن۔  امریکہ کے وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن نے دہشت گردی کے تعلق سے پاکستان پر دباؤ بناتے ہوئے آج کہا کہ اگر پاکستان دہشت گردی کے خلاف کام نہیں کرے گا تو اسے ملنے والی امریکی مدد روک دی جائے گی۔ مسٹر ٹلرسن نے کہا کہ پاکستان کو دہشت گردی سے متعلق اپنا موقف تبدیل کرنا چاہئے۔ وزارت خارجہ میں نامہ نگاروں سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر ٹلرسن نے کہا کہ پاکستان میں دہشت گرد تنظیموں کو پناہ دیئے جانے کے ثبوت ملے ہیں۔ امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ یہ دہشت گرد تنظیمیں پاکستان میں رہ کر امریکی فوج کے خلاف حملے کا منصوبہ بناتی ہیں اور افغانستان میں امن بحال کرنے کی امریکی کوششوں میں رکاوٹ ڈالتی ہیں۔

مسٹر ٹلرسن نے کہا کہ پاکستان کو ان دہشت گرد تنظیموں کے خلاف اپنی حکمت عملی تبدیل کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اگر پاکستانی حکومت دہشت گردی کے تعلق سے اپنا موقف تبدیل کرنے میں ناکام رہتی ہے تو اسے امریکہ سے ملنے والی خصوصی مدد گنوانی پڑ سکتی ہے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اپنی تقریر میں افغانستان پر امریکی حکمت عملی کے بارے میں معلومات دینے کے بعد مسٹر ٹلرسن کے اس بیان کو کافی اہم سمجھا جارہا ہے۔

پاکستان دہشت گردی کے تعلق سے اپنا موقف تبدیل کرے: ٹلرسن

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز