مسئلہ کشمیر کیلئے حکومت ہند کے ذریعہ دنیشور شرما کو نمائندہ مقرر کرنے پر پاکستان کے پیٹ میں مروڑ

پاکستان نے کہا ہے کہ انٹیلی جنس بیورو (آئی بی) کے سابق سربراہ دنیشور شرما کو کشمیر معاملے میں حکومت ہند کی جانب سے اپنا نمائندہ مقرر کرنا منصفانہ اور حقیقت پسندانہ اقدام نہیں ہے

Oct 25, 2017 04:36 PM IST | Updated on: Oct 25, 2017 04:36 PM IST

اسلام آباد: پاکستان نے کہا ہے کہ انٹیلی جنس بیورو (آئی بی) کے سابق سربراہ دنیشور شرما کو کشمیر معاملے میں حکومت ہند کی جانب سے اپنا نمائندہ مقرر کرنا منصفانہ اور حقیقت پسندانہ اقدام نہیں ہے۔ سما ٹیلی ویژن کے مطابق وزارت خارجہ کے ترجمان نے کل رات ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اگر اس بات چیت کو بامعنی اور نتیجہ خیز بنانا ہے تو اس میں تین فریقوں -ہندوستان، پاکستان اور کشمیریوں کو بھی شامل کیا جانا چاہئے۔ اس کے علاوہ حریت کانفرنس کے رہنماؤں کو شامل کئے بغیر اس کا کوئی بہتر نتیجہ نہیں نکلے گا۔ انهوں نے کہا کہ نامزد نمائندہ کو کشمیریوں کے جذبات سمجھنے کی ذمہ داری سونپي گئی ہے اور گزشتہ 70 سالوں سے سب کو پتہ ہے کہ حقیقت کیا ہے؟

مسئلہ کشمیر کیلئے حکومت ہند کے ذریعہ دنیشور شرما کو نمائندہ مقرر کرنے پر پاکستان کے پیٹ میں مروڑ

علامتی تصویر: رائٹرز

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز