پاکستان کا الزام ، ورکنگ باؤنڈری پر ہندوستانی فوج کی فائرنگ سے 4 خواتین سمیت 6 پاکستانی شہری ہلاک

عالمی یوم امن کے موقع پر (21 ستمبر کو) بھارت کی جارحیت۔ ورکنگ باؤنڈری پر چھپر، ہرپال اور چارواہ سیکٹر میں بھارتی فائرنگ سے 6 معصوم پاکستانی ہلاک اور 26 دیگر زخمی ہوگئے‘

Sep 22, 2017 04:02 PM IST | Updated on: Sep 22, 2017 04:02 PM IST

اسلام آباد: پاکستانی فوج کا کہنا ہے کہ سیالکوٹ میں ورکنگ باؤنڈری پر ہندوستانی فوج کی فائرنگ سے کم از کم 6 عام شہری ہلاک جبکہ 26 دیگر زخمی ہوگئے ہیں۔ مہلوکین میں 4 خواتین بھی شامل ہیں۔ پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ پر اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ’عالمی یوم امن کے موقع پر (21 ستمبر کو) بھارت کی جارحیت۔ ورکنگ باؤنڈری پر چھپر، ہرپال اور چارواہ سیکٹر میں بھارتی فائرنگ سے 6 معصوم پاکستانی ہلاک اور 26 دیگر زخمی ہوگئے‘۔

روزنامہ ڈان نے اپنی رپورٹ میں مقامی انتظامیہ اور آئی ایس پی آر کے حوالے سے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے آبادی والے علاقوں پر بلااشتعال مارٹر فائرنگ کی گئی۔ رپورٹ میں ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر فرخ نوید کے حوالے سے کہا گیا ہے ’مہلوکین کی شناخت مریم محمود، مریم اسحاق، نفیسہ بی بی، خورشید بی بی، اشرف منصور اور عمران غنی کے بطور کی گئی ہے‘۔ ڈپٹی کمشنر فرخ نوید نے کہا ہے کہ بھارتی فائرنگ کی وجہ سے مویشیوں کی ایک بڑی تعداد ہلاک ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ فائرنگ سے متاثرہ علاقوں میں تمام اسپتالوں کو الرٹ کردیا گیا ہے جبکہ متعدد علاقوں میں ریلیف کیمپ قائم کئے گئے ہیں۔ آئی ایس پی آر نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ پاکستانی رینجرز سرحد پار ہندوستان سے پاکستان کے رہائشی علاقوں پر ہونے والی فائرنگ کا منہ توڑ جواب دے رہے ہیں۔

پاکستان کا الزام ، ورکنگ باؤنڈری پر ہندوستانی فوج کی فائرنگ سے 4 خواتین سمیت 6 پاکستانی شہری ہلاک

علامتی تصویر: گیٹی امیجیز

روزنامہ جنگ کی ایک رپورٹ کے مطابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، سابق صدر آصف علی زرداری اور وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے ہندوستانی فائرنگ میں انسانی جانوں کے اتلاف کی مذمت کی ہے۔ یہ بات یہاں قابل ذکر ہے کہ ہند و پاک سرحدوں پر گذشتہ ڈیڑھ ماہ سے کشیدگی کا ماحول بنا ہوا ہے۔ اس دوران دونوں طرف کئی انسانی جوانوں کا اتلاف ہوا۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز