اسرائیل نے مقدمہ چلائے بغیر ہی فلسطینی خاتون رکن پارلیمنٹ کو سنادی چھ ماہ قید کی سزا

Jul 18, 2017 11:00 PM IST | Updated on: Jul 18, 2017 11:00 PM IST

یروشلم : فلسطین کی معروف رکن پارلیمان اور انسانی حقوق کی کارکن خالدہ جرار کو اسرائیلی حکام نے بغیر مقدمہ چلائے چھ ماہ کے لیے قید کر دیا ہے۔ یہ بات انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے ایک گروپ ادامیر نے بتائی ہے۔ جرار کو رواں ماہ کے آغاز میں ایک ایسے گروپ کی رکنیت پر گرفتار کر لیا گیا تھا جسے اسرائیل ایک دہشت گرد تنظیم قرار دیتا ہے۔

خالدہ جرار ایک سال قبل ہی اسرائیلی جیل سے رہا ہوئی تھیں۔ غیر سرکاری تنظیم ادامیر نامی کے مطابق فلسطینی پارلیمنٹ کی رکن ہونے کے ناطے انہیں چھ ماہ کی انتظامی حراست کی سزا سنائی گئی ہے۔ خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق اسرائیلی فوج کی طرف سے جرار کے معاملے پر کسی سوال کا جواب نہیں دیا گیا۔

اسرائیل نے مقدمہ چلائے بغیر ہی فلسطینی خاتون رکن پارلیمنٹ کو سنادی چھ ماہ قید کی سزا

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز