حافظ سعید کی ریلی میں شامل ہو کر برے پھنسے فلسطینی سفیر، واپس بلایا گیا

جماعت الدعوة کے سربراہ اور 26/11 کو ہوئے ممبئی دہشت گردانہ حملے کے ماسٹر مائنڈ حافظ سعید کی اسلام آباد میں ہوئی ریلی میں پاکستان میں فلسطینی سفیر کی موجودگی کا مسئلہ گرما گیا ہے۔

Dec 30, 2017 07:42 PM IST | Updated on: Dec 30, 2017 08:08 PM IST

نئی دہلی۔ جماعت الدعوة کے سربراہ اور 26/11 کو ہوئے ممبئی دہشت گردانہ حملے کے ماسٹر مائنڈ حافظ سعید کی اسلام آباد میں ہوئی ریلی میں پاکستان میں فلسطینی سفیر کی موجودگی کا مسئلہ گرما گیا ہے۔ ہندوستان کی مخالفت کو دیکھتے ہوئے اب فلسطین نے اسلام آباد سے اپنے سفیر کو واپس بلا لیا ہے۔

ہندوستانی وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے کہا، "ہم نے اس کے بارے میں خبریں دیکھی ہیں۔ ہم نئی دہلی میں فلسطینی سفیر اور فلسطینی حکام کے سامنے اس مسئلے کو سختی سے اٹھا رہے ہیں۔ '' خبروں کے مطابق، اسلام آباد میں فلسطینی سفیر ولید ابو علی نے پاکستان کے راولپنڈی میں دفاع-اے-پاکستان کونسل کی جانب سے جمعہ کی صبح منعقد ایک بڑی ریلی میں شرکت کی تھی۔ دفاع-اے-پاکستان (پاکستان کی حفاظت) کونسل اسلامی گروپوں کا ایک اتحاد ہے جس میں حافظ کی تنظیم بھی شامل ہے۔

حافظ سعید کی ریلی میں شامل ہو کر برے پھنسے فلسطینی سفیر، واپس بلایا گیا

پاکستان ایم این اے سرکاری ہینڈل سے ٹویٹ کی گئی تصویر

فلسطین نے کیا اظہار افسوس

ہندوستانی وزارت خارجہ کی مخالفت کو دیکھتے ہوئے فلسطین نے اس پر افسوس ظاہر کیا ہے اور واضح کیا ہے کہ دہشت گردی پر اس کا موقف مکمل طور پر واضح ہے اور وہ اس معاملے کو سنجیدگی سے لے رہا ہے۔ ہندوستان میں فلسطین کے سفیر ابو الہیجا نے کہا کہ پاکستان میں ہمارے سفیر نے جو کیا وہ ہماری حکومت کو قبول نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ فلسطین ہمیشہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہندوستان کے ساتھ کھڑا ہے۔

Loading...

سفیر کو پتہ نہیں تھا کہ کون ہے حافظ

ہندوستان میں فلسطینی سفیر عدنان ابو الہیجا نے اسلام آباد میں اپنے سفیر کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے سفیر کو پتہ نہیں تھا کہ حافظ کون ہے۔ ریلی میں چونکہ حافظ کی تقریر سفیر کی تقریر کے بعد تھی، اس لئے انہیں پتہ ہی نہیں چل سکا۔ جیسے ہی حافظ سعید نے اپنے خطاب میں اپنے بارے میں بتایا، ہمارے سفیر فوری طور پر وہاں سے اٹھ کر چلے گئے۔

ہندوستان کو جتایا بھروسہ

فلسطین نے اپنے سفیر کے اس طرح سے ریلی میں شامل ہونے کے معاملہ کو سنجیدگی سے لیا ہے اور زور دیا کہ اس معاملے کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے دہشت گردی کی حمایت کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز