آئی ایس آئی ایس سے لڑنے میں مدد کرے علیحدگی پسند، ماؤنواز گروپ :دوتیرتے

May 29, 2017 04:12 PM IST | Updated on: May 29, 2017 04:12 PM IST

منیلا۔  فلپائن کے صدر روڈریگو دوتیرتے نے ملک کے علیحدگی پسندوں اور ماؤنوازوں کی قیادت والے باغیوں سے اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) سے منسلک دہشت گرد تنظیم کے خلاف جنگ میں مدد کرنے کی اپیل کی ہے۔ دہشت گردی کے بڑھتے خطرے سے نمٹنے میں مدد مانگتے ہوئے مسٹر روڈریگو دوتیرتے نے کہا کہ دہشت گردی ہم سب کی دشمن ہے۔ آئی ایس کے خلاف منسلک اس جنگ میں ساتھ دینے والوں کو معاوضہ بھی اداکیا جائے گا۔ مسٹر دوتیرتے نے کہا کہ جنگجوؤں اور فوجیوں کے ساتھ مل کر لڑنے کا خیال علیحدگی پسند گروہوں میں سے ایک کے رہنما کی طرف سے آیا۔ جولو جزیرے پر فوج کی کیمپ کا معائنہ کرنے پہنچے مسٹردوتیرتے نے کہا کہ وہ کمیونسٹ اور علیحدگی پسند باغیوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ دہشت گردی کے خلاف اس جنگ میں حکومت اور فوج کا ساتھ دیں ۔ انهوں نے کہا، "ہم ان سے اسی طرح کا برتاؤ کریں گے جیسا کہ فوج کے ساتھ کرتے ہیں۔ انہیں فوج کی طرح تنخواہ اور دوسری سہولیات بھی ملیں گی۔"

صدر دوتیرتے یہ تجویز مورو اسلامک لبریشن فرنٹ اور مورو نیشنل لبریشن فرنٹ کے علاوہ کمیونسٹ نیو پیپلز آرمی (این پی اے) کو دیتے ہوئے کہا کہ گوریلا جنگ چھوڑ کر وہ حکومت کا ساتھ دیں۔ مسٹر دوتیرتے نے کہا کہ وہ مسلم اور ماؤنواز باغیوں کو فوج میں ایڈجسٹ کرنے کے لئے فوج کی ایک نئی یونٹ کی تشکیل بھی کرسکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا باغیوں کے فوج میں آنے سے فوج مضبوط ہوگی کیونکہ جنگجوؤں کو مقامی علاقوں میں جنگ کا تجربہ اور مہارت ہے۔

آئی ایس آئی ایس سے لڑنے میں مدد کرے علیحدگی پسند، ماؤنواز گروپ :دوتیرتے

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے جنوبی فلپائن کے مراوي میں دہشت گردوں نے اہم سڑکوں اور پلوں پر قبضہ کر لیا ہے اوروہ وہاں مضبوطی سے ڈٹے ہوئے ہیں۔ فوج کی جوابی کارروائی میں ساٹھ دہشت گردوں، 15 سیکورٹی فورسز اہلکاروں اور 9 شہریوں کی موت ہوئی ہے، جبکہ ہزاروں افراد بے گھر ہو گئے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز