ملائیشیا کے مدرسہ میں آگ کے معاملے میں پولیس نے سات بچوں کو گرفتار کیا

Sep 17, 2017 09:56 AM IST | Updated on: Sep 17, 2017 09:56 AM IST

کوالالمپور۔  ملائیشیا کے دارالحکومت کوالالمپور کے ایک اقامتی درسگاہ میں لگنے والی شدید آگ کے معاملے میں پولیس نے سات بچوں کو گرفتار کیا ہے۔ اس خوفناک سانحہ میں کم از کم 23 بچوں کی موت ہوگئی تھی ۔ کوالالمپور پولیس کے سربراہ امر سنگھ نے صحافیوں کو بتایا کہ ان بچوں کی عمر 11 سے 18 سال کے درمیان ہے اور انہیں عدالت میں پیش کیا گیا جہاں سے سات دن کی ریمانڈ پر بھیج دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ان کی گرفتاری کے ساتھ یہ معاملہ حل کرلیا گیا ہے۔ یہ طالب علم قریب کے ہیں اور ان میں سے بعض کے مرجوآنا منشیات لینے کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔ پولیس نے اس معاملے کو قتل اور دھوکہ دہی کے کیس میں شامل کرلیا ہے۔ آگ لگنے کا یہ واقعہ جمعرات کی صبح ہوا تھا جب سب سے اوپری منزل پر طلبہ سو رہے تھے اور ان کے کمروں کی کھڑکیوں کے گرل سے ڈھکا تھا جس کی وجہ سے باہر جانے کا موقع نہیں ملا۔

ملائیشیا کے مدرسہ میں آگ کے معاملے میں پولیس نے سات بچوں کو گرفتار کیا

اسکول کے باہر راحتی عملہ راحت اور بچاو کے کاموں میں مصروف: رائٹرز۔

یہ پوچھے جانے پر کہ ان کا ارادہ متاثرین کو قتل کرنے کا تھا،مسٹر سنگھ نے کہا کہ ان کا مقصد آگ لگانا تھا لیکن شاید ان کی عمر یا سمجھ کی سطح کو دیکھتے ہوئے یہ کہا جا سکتا ہے کہ انہیں یہ پتہ نہیں ہوگا کہ اس کے نتائج بہت بھیانک ہوسکتے ہیں۔ آگ لگانے کے لئے، دو گیس سلنڈر باورچی خانے سے دوسری منزل پر لایا گیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز