نوٹ بندی کا اثر ، آئی ایم ایف نے ہندوستان کی شرح ترقی کا تخمینہ 7.6 سے کم کرکے 6.6 فیصد کیا

Jan 16, 2017 11:05 PM IST | Updated on: Jan 16, 2017 11:05 PM IST

واشنگٹن : بین الاقوامی مالیاتی فنڈآئی ایم ایف نے رواں مالی سال میں ہندوستان کی شرح ترقی کا تخمینہ 7.6 سے کم کرکے 6.6 فیصد کر دیا ہے۔ اس کی وجہ نوٹ بندی کے منفی اثر کو قرار دیا گیا ہے۔ خیال رہے کہ قبل ازیں ورلڈ بینک بھی ہندوستان کی ترقی کی شرح کا تخمینہ 7.6 سے کم کرکے 7 فیصد کر چکا ہے۔

آئی ایم ایف نے پیر کو ورلڈ اکنامک آؤٹ لک اپ ڈیٹ جاری کیا۔ آئی ایم ایف نے رواں مالی سال اور اگلے مالی سال میں ہندوستان کی ترقی کی شرح کو بالترتیب 1 فیصد اور 0.4 فیصد کم کر دیا۔ بنیادی طور پر اس کے پیچھے کی وجہ نوٹب بندی کی وجہ سے پیدا بحران کو بتایا گیا ہے۔

نوٹ بندی کا اثر ، آئی ایم ایف نے ہندوستان کی شرح ترقی کا تخمینہ 7.6 سے کم کرکے 6.6 فیصد کیا

تاہم آئی ایم ایف نے امید ظاہر کی کہ 2016 میں معیشت کی سست روی اگلے دو سالوں میں ٹھیک ہوجائے گی ۔ آئی ایم ایف کے مطابق خاص طور پر ترقی پذیر ممالک کے مارکیٹ اگلے برسوں میں تیزی دکھا سکتے هے۔ عالمی ترقی کی شرح کا اندازہ 3.1 فیصد ہی رکھا گیا ہے۔ اکتوبر 2016 میں بھی اتنی ہی شرح ترقی کا اندازہ لگایا گیا تھا۔

آئی ایم ایف کے مطابق رواں مالی سال اور اگلا مالی سال ہندوستانی معیشت کے لئے مایوس کن رہے گا۔ تاہم 2018 میں توقع ظاہر کی جا رہی ہے کہ ہندوستانی معیشت 7.7 فیصد کی متوقع ترقی کی شرح کو حاصل کر پائے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز