زمبابوے پر فوج کا قبضہ ! ، صدر رابرٹ موگابے اور ان کی اہلیہ گھر پر نظر بند

Nov 15, 2017 11:44 PM IST | Updated on: Nov 15, 2017 11:44 PM IST

ہرارے : افریقی ملک زمبابوے میں فوج نے حکومت کو تختہ پلٹتے ہوئے اقتدار سنبھال لیا ہے۔ تاہم فوج کی طرف سے نیشنل ٹیلی ویژن پر بتایا گیا ہے کہ اس کارروائی کا مقصد صدر رابرٹ موگابے کے ارد گرد موجود ’مجرموں‘ کو نشانہ بنانا ہے۔تاہم میڈیا رپورٹس میں بتایا جارہا ہے کہ فوج نے صدر رابرٹ موگابے اور ان کی اہلیہ کو ان کے گھر پر نظر بند کر دیا ہے اور بعض اطلاعات کے مطابق انھیں حراست میں لے لیا گیا ہے ۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق فوجیوں اور بکتر بند گاڑیوں نے دارالحکومت ہرارے کے وسطی حصے میں واقع مرکزی حکومتی دفاتر، پارلیمان اور عدالتوں تک جانے والے راستوں کو بند کر رکھا ہے۔زمبابوے کی فوج کے چیف آف اسٹاف لاجسٹکس میجر جنرل ایس بی مویو نے ملکی ٹیلی ویژن پر بتایا، ’’ہم صرف ان (موگابے) کے ارد گرد موجود مجرموں کو نشانہ بنا رہے ہیں جو ایسے جرائم کا ارتکاب کر رہے ہیں جن کی وجہ سے ملک میں سماجی اور معاشی مشکلات پیدا ہو رہی ہیں تاکہ انہیں انصاف کے کٹہرے میں لایا جا سکے۔‘‘ جنرل مویو کا مزید کہنا تھا، ’’جیسے ہی ہم اپنا مشن مکمل کر لیں گے، ہمیں امید ہے کہ صورتحال معمول کی طرف لوٹ جائے گی۔‘‘

زمبابوے پر فوج کا قبضہ ! ، صدر رابرٹ موگابے اور ان کی اہلیہ گھر پر نظر بند

منگل اور بدھ کی درمیانی شب ہرارے میں تین دھماکوں کی آوازیں بھی سنی گئی تھیں۔اس سے پہلے آرمی چیف کی بر طرف نائب صدر کی حمایت میں دھمکی آمیز بیان کے بعد چار ٹینک اور بکتر بند گاڑیاں شہر کی جانب بڑھتے ہوئے دیکھی گئی تھیں۔ زمبابوے میں غیر یقینی صورت حال کے پیش نظر شہریوں نے بنکوں سے اپنی رقوم نکلوانا شروع کردی ہیں اور بنکوں میں صارفین کی لمبی قطاریں دیکھی گئی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز