ایران : مظاہرہ کے دوران تشدد اور آگ زنی ، 2 افراد کی موت ، سپریم لیڈر سے اقتدار چھوڑنے کا مطالبہ

ایران کے کئی شہروں میں جاری حکومت مخالف مظاہروں کے دوران دورد شہر میں سکیورٹی فورسز کی جانب سے کی گئی فائرنگ میں کم از کم دو افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

Dec 31, 2017 12:07 PM IST | Updated on: Dec 31, 2017 12:08 PM IST

دبئی: ایران کے کئی شہروں میں جاری حکومت مخالف مظاہروں کے دوران دورد شہر میں سکیورٹی فورسز کی جانب سے کی گئی فائرنگ میں کم از کم دو افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ ایران میں حکومت مخالف مظاہرہ کے تیسرے دن سوشل میڈیا پر پوسٹ کئے گئے ایک ویڈیو سے پتہ چلا ہے کہ وہاں حکومت مخالف مظاہروں کے دوران کچھ جگہوں پر تشدد اور آگ زنی کے واقعات ہوئے ہیں۔

ویڈیو میں دورد شہر میں مظاہرین ایران کے سپریم مذہبی رہنما آیت اللہ علی خامنہ ای کے خلاف نعرے لگاتے ہوئے دیکھے جا سکتے ہیں۔ تہران یونیورسٹی میں مظاہرین نے آیت اللہ علی خامنہ ای سے اقتدار چھوڑنے کا مطالبہ کیا جہاں پولیس کے ساتھ ان کی جھڑپیں بھی ہوئیں۔

ایران : مظاہرہ کے دوران تشدد اور آگ زنی ، 2 افراد کی موت ، سپریم لیڈر سے اقتدار چھوڑنے کا مطالبہ

ایران کے مختلف شہروں میں گذشتہ تین روز سے جاری اسٹیبلشمنٹ مخالف مظاہرے پرتشدد رنگ اختیار کر گئے ہیں۔ فوٹو : ای پی اے ۔

ادھر ہزاروں لوگ سڑکوں پر اترکر حکومت کی حمایت بھی کر رہے ہیں۔ ایران کے سینئر افسر ان حکومت مخالف مظاہروں کے لئے غیر ملکی طاقتوں کو ذمہ دار ٹھہرا رہے ہیں۔قابل غور ہے کہ 2009 میں متنازع انتخابات کی مخالفت میں مظاہروں کے بعد یہ پہلی بار ہے جب لوگوں نے اتنی بڑی تعداد میں سڑکوں پر اترکر اپنا غصہ ظاہر کیا ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز